Saturday , September 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / ارون جیٹلی کو وریندر سہیواگ و گوتم گمبھیر کی مکمل حمایت

ارون جیٹلی کو وریندر سہیواگ و گوتم گمبھیر کی مکمل حمایت

رشوت کے الزامات مناسب نہیں۔ سابق ہندوستانی اوپنرس کے ٹوئیٹس
نئی دہلی 20 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن کے صدر ارون جیٹلی کو کرپشن کے الزامات کا سامنا ہے ۔ اس دوران ارون جیٹلی کو ریاست سے تعلق رکھنے والے دو بڑے کرکٹ اسٹارس وریندر سہیواگ اور گوتم گمبھیر کی تائید حاصل ہوئی ہے ۔ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے 13 سال تک دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن کی صدارت کی تھی ۔ وہ 2013 تک اس عہدہ پر رہے تھے ۔ ان پر دہلی حکومت کی جانب سے ان کے دور میں کرپشن کے الزامات عائد کئے گئے ہیں۔ ریاستی حکومت کا مطالبہ ہے کہ ارون جیٹلی کو مستعفی ہوجانا چاہئے یا پھر انہیں مرکزی کابینہ سے بیدخل کیا جانا چاہئے تاکہ کرپشن کے الزامات کی آزادانہ تحقیقات ہوسکے۔

تاہم گمبھیر اور وریندر سہیواگ نے جیٹلی کی زبردست حمایت کی ہے ۔ گوتم گمبھیر نے اپنے ٹوئیٹ میں کہا کہ ارون جیٹلی کو ڈی ڈی سی اے میں کرپشن کیلئے ذمہ دار قرار دینا مناسب نہیں ہے ۔ انہوں نے دہلی کیلئے ایک مناسب اسٹیڈیم کی تعمیر کو یقینی بنایا ہے جس میں ٹیکس دہندگان کا پیسہ استعمال نہیں کیا گیا ۔ کچھ سابق کھلاڑیوں کی جانب ارون جیٹلی کو نشانہ بنایا جا رہا ہے جو درست نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج جو لوگ جیٹلی پر تنقید کر رہے ہیں انہیں جیٹلی کی وجہ سے ہی دہلی کرکٹ اسوسی ایشن میں اہم عہدے دئے گئے تھے ۔ سہیواگ نے اپنی جانب سے ارون جیٹلی کی ستائش کی اور کہا کہ انہوں نے ہمیشہ کھلاڑیوں کی مدد کی ہے اور ان کی حوصلہ افزائی کی ہے ۔ بلے باز سہیواگ نے جو دہلی سے ہریانہ منتقل ہوگئے تھے اور انٹرنیشنل کرکٹ سے جاریہ سال ہی سبکدوش ہوئے ہیں کوئی سیاسی ادعا کرنے سے گریز کیا ہے تاہم انہوں نے کھلاڑیوں کی مدد کرنے میں ارون جیٹلی کے رول کی ستائش کی ہے ۔ سہیواگ نے کہا کہ جب وہ دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن سے وابستہ تھے اور جب کبھی انہیں کسی کھلاڑی کے حیرت انگیز انتخاب کا علم ہوتا تو انہیں صرف ارون جیٹلی کو مطلع کرنے کی ضرورت ہوتی ۔ ایسے میں ارون جیٹلی فوری حرکت میں آجاتے اور کسی غلطی کی اصلاح کرلیتے اور حقیقی کھلاڑیوں سے انصاف کیا جاتا ۔ ڈی ڈی سی اے میں دوسروں کے خلاف لب کشائی کرنا بھی ممکن نہ تھا لیکن ارون جیٹلی ہمیشہ ہی کھلاڑیوں کیلئے دستیاب ہوتے تھے چاہے انہیں کسی بھی وقت کسی بھی مشکل کا سامنا ہو۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT