Thursday , September 21 2017
Home / سیاسیات / ارون جیٹلی کو کلین چٹ نہیں دی گئی

ارون جیٹلی کو کلین چٹ نہیں دی گئی

تحقیقات سے فرار کیوں ؟ کیا کرپشن کا ارتکاب بھوتوں نے کیا ؟ دہلی حکومت
نئی دہلی ۔ 28 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) حکومت دہلی نے بی جے پی کے استدلال کو مسترد کردیا کہ دہلی ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن (ڈی ڈی سی اے) امور میں مالی بے قاعدگیوں کی تحقیقات کیلئے قائم کردہ کمیٹی نے وزیرفینانس ارون جیٹلی کو کلین چٹ دی ہے۔ واضح رہے کہ ارون جیٹلی 2013ء تک تقریباً 13 سال اس کرکٹ ادارہ کے سربراہ رہے۔ چیف منسٹر اروند کجریوال نے کہا کہ وہ وزیرفینانس ارون جیٹلی پر تنقید کیلئے معذرت خواہی نہیں کریں گے کیونکہ انہیں کوئی کلین چٹ نہیں دی گئی۔ ڈپٹی چیف منسٹر منیش سیسوڈیا نے وزیرفینانس اور بی جے پی سے ڈی ڈی سی اے امور میں مالی بے قاعدگیوں کے تعلق سے چار سوالات کئے ہیں۔ انہوں نے یہ جاننا چاہا کہ آخر بی جے پی تحقیقات سے فرار کیوں اختیار کررہی ہے۔ ’’ہمارے پینل نے اس رپورٹ میں کسی کا نام نہیں لیا ہے۔ کیا اس کا مطلب یہ ہیکہ اتنی مدت کے دوران کرپشن ہوا اور بھوتوں نے یہ کام کیا ہے؟ سیسوڈیا نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جیٹلی کو بری کرنے کی اتنی عجلت پسندی کیوں؟ اتنا زیادہ دباؤ آخر کیوں؟ تحقیقاتی کمیشن نے اپنا کام کل ہی تو شروع کیا ہے۔ گوپال سبرامنیم نے جنہیں کمیشن کا سربراہ مقرر کیا گیا، کل مکتوب قبولیت دیا ہے۔ اروند کجریوال نے ٹوئیٹ کیا کہ دہلی حکومت کی جانب سے کوئی کلین چٹ نہیں دی گئی۔ رپورٹ میں کئی غلطیوں کی نشاندہی کی گئی لیکن کسی کو ذمہ دار قرار نہیں دیا گیا ہے۔ ڈی ڈی سی اے مقدمہ میں دہلی حکومت کے تحقیقاتی پینل کے سلسلہ میں چیف منسٹر نے ایک اور ٹوئیٹ کیا کہ اس میں کسی ایک کا بھی نام نہیں لیا گیا اور ذمہ داروں کا پتہ چلانے تحقیقاتی کمیشن کی سفارش کی ہے۔ چنانچہ اب ہم یہی کررہے ہیں۔ ڈی ڈی سی اے کے خلاف بعض الزامات کا حوالہ دیتے ہوئے سیسوڈیا نے کہا کہ جس وقت یہ بے قاعدگیاں ہورہی تھیں اس وقت 1999-2003ء کیا ارون جیٹلی ڈی ڈی سی اے کے سربراہ نہیں تھے۔ جس وقت لیاپ ٹاپس 16 ہزار روپئے یومیہ کرایہ پر حاصل کئے گئے اور فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کی تزئین نو کے بجٹ کو 24 کروڑ سے بڑھا کر 144 کروڑ روپئے کیا گیا، اس وقت ارون جیٹلی کیا ڈی ڈی سی اے کی قیادت نہیں کررہے تھے۔ اس مدت کے دوران جن کمپنیوں کو کنٹراکٹس دیئے گئے ان کے ڈائرکٹرس ایک ہی ہیں اور ان سب کے پتے بھی یکساں ہیں۔ کیا یہ سب کرپشن کی نشاندہی نہیں کرتے؟ یہ سب کیسے ہوا اور کس نے کیا؟۔

TOPPOPULARRECENT