Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کا فیصلہ

اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کا فیصلہ

آئندہ پندرہ یوم میں 8792 مخلوعہ جائیدادوں کیلئے اعلامیہ کی اجرائی
حیدرآباد ۔3 مئی (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات عمل میں لانے کا حکومت نے فیصلہ کیا اور آئندہ پندرہ یوم میں جملہ 8792 اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کیلئے باقاعدہ اعلامیہ جاری کیا جائے گا اور آئندہ 6 ماہ میں تلنگانہ اسٹیٹ بینک سرویس کمیشن کے ذریعہ تقررات کا عمل مکمل کرلیا جائے گا۔ ڈپٹی چیف منسٹر برائے امور تعلیم مسٹر کے سری ہری نے اس بات کا انکشاف کیا اور ان تقررات کیلئے کوئی ’’ٹسٹ‘‘ (ٹیچرس اہلیتی ٹسٹ‘‘ منعقد نہیں کیا جائے گا بلکہ فی الوقت جو امیدوار ٹیچرس اہلیتی ٹسٹ کامیاب ہیں وہی امیدوار تلنگانہ اسٹیٹ پبلک سرویس کمیشن کے ذریعہ کئے جانے والے تقررات کیلئے درخواست پیش کرنے کے اہل ہوں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست میں صدارتی احکامات پائے جانے کے باعث سابق قدیم اضلاع تلنگانہ کی بنیاد پر ہی تقررات عمل میں لائے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اساتذہ کی مخلوعہ جائیدادیں مختلف زمروں کی ہوں گی، جن میں ایس جی ٹی، پنڈت ٹیچرس، فزیکل ایجوکیشن ٹیچرس وغیرہ شامل رہیں گے۔ اخباری نمائندوں کے مختلف سوالات کے جواب دیتے ہوئے مسٹر کے سری ہری نے بتایا کہ جاریہ نئے تعلیمی سال کے دوران اساتذہ کے تبادلوں کی کوئی گنجائش نہیں رہے گی۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے اساتذہ کے تقررات کیلئے کوئی خصوصی ٹسٹ کے انعقاد عمل میں لائے جانے کی بات کو مسترد کردیا اور کہا کہ فی الوقت ٹسٹ کامیاب امیدواروں کی تعداد میں بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے ٹسٹ منعقد کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ ریاست تلنگانہ میں 600 گورنمنٹ ہائی اسکولس میں ڈیجیٹل کلاسیس شروع کئے جائیں گے اور ساتھ ہی ساتھ گورنمنٹ ہائی اسکولس میں بائیو میٹرک سسٹم متعارف کیا جائے گا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے مزید بتایا کہ ریاست میں جونیر اور ڈگری لکچررس کی مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات عمل میں لانے کیلئے بھی بہت جلد اعلامیہ کی اجرائی متوقع ہے۔

TOPPOPULARRECENT