Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / اسرائیلی فوجیوں نے 5 فلسطینی ہلاک کردیئے

اسرائیلی فوجیوں نے 5 فلسطینی ہلاک کردیئے

تشدد غزہ تک پھیل گیا، اسرائیلی اور فلسطینیوں میں جھڑپیں، چاقوزنی اور فائرنگ کے واقعات

یروشلم ؍ غزہ سٹی ۔ 9 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) کم از کم 5 فلسطینی ہلاک اور دیگر 21 زخمی کردیئے گئے  جبکہ اسرائیلی فوجیوں نے غزہ کی سرحد پر احتجاجی مظاہرین پر فائرنگ کردی۔ چاقوزنی کی تازہ وارداتوں سے اسرائیل دہل کر رہ گیا ہے اور پہلے ہی سے کشیدہ صورتحال کی شدت میں مزید اضافہ ہوگیا۔ اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے درمیان گذشتہ ایک ہفتہ سے جاری تشدد آج غزہ پٹی تک پھیل گیا۔ اسرائیل کی سرحد کے قریب غزہ سٹی کے علاقہ اور خان یونس میں جھڑپیں شروع ہوگئیں۔ احمد ال ہرباوی، شادی دولہ اور عابد الواحدی تینوں افراد جن کی عمر 20 سال کے آس پاس تھی، گولی مار کر ہلاک کردیئے گئے۔ یہ واقعہ الشجاعیہ کے مشرقی مضافات میں پیش آیا۔ 15 سالہ محمد الرقیب کو اسرائیلی فوجیوں نے خان یونس کے قریب گولی مار کر ہلاک کردیا۔ غزہ کی حماس حکومت کی وزارت صحت اور طبی ارکان عملہ نے اس کا انکشاف کیا۔ ایک نامعلوم 19 سالہ نوجوان کو خان یونس کے مشرقی مضافات میں جو غزہ کے حدود میں ہے، ہلاک کردیا گیا۔ اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے 21 فلسطینی زخمی ہوئے۔ اسرائیلی فوجی عہدیداروں نے کہا کہ صیانتی صورتحال کشیدہ ہے۔ تقریباً 400 فلسطینی حفاظتی باڑ کے پاس پہنچ گئے تھے اور انہوں نے بڑے بڑے پتھروں اور جلتے ہوئے ٹائروں سے اسرائیلی فوجیوں پر حملہ کیا تھا۔

وہ بفرزون سے جہاں داخلہ ممنوع ہے، گذرنا چاہتے تھے۔ اسلامی تنظیم حماس غزہ پٹی پر برسراقتدار ہے۔ اس نے جمعہ کے دن اسرائیلی کارروائیوں کے خلاف جو مغربی کنارہ اور مشرقی یروشلم میں کی گئی ہیں، ’’یوم برہمی‘‘ منانے کا اعلان کیا تھا۔ تشدد اس وقت پھوٹ پڑا جبکہ عربوں اور یہودیوں نے ایک دوسرے پر چاقوزنی جاری رکھی جس کی وجہ سے کشیدگی میں مزید اضافہ ہوگیا۔ 3 ہفتوں سے جاری تشدد اس علاقہ کو بدنام کرچکا ہے۔ اسرائیل کے شہر دمونا میں ایک اسرائیلی کمسن لڑکے نے 4 فلسطینی بدوؤں کو چاقوزنی کے ذریعہ زخمی کردیا۔ یہ افراد مقامی مجلس بلدیہ میں کام کرتے تھے۔ دیگر دو افراد بھی شدید زخمی ہیں۔ 17 سالہ حملہ آور جس کا پولیس کو علم ہے، تفتیش کیلئے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ وہ سمجھتا ہیکہ تمام عرب دہشت گرد ہیں اور یہی وجہ ہیکہ اس نے ان افراد کو چاقوزنی کی تھی۔ وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو کے دفتر نے بے قصور عربوں پر چاقو سے حملہ کی سخت مذمت کی۔ وزیراعظم نے کہا کہ اسرائیل نظم و قانون کا ملک ہے۔ جو لوگ یہاں تشدد برپا کرنا چاہتے ہیں اور قانون شکنی کرنا چاہتے ہیں، چاہے وہ کسی بھی قوم سے تعلق رکھتے ہوں ان کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔ قانون جس حد تک سختی کی اجازت دیتا ہے برتی جائے گی۔

عربوں پر ایک اور حملہ میں چند یہودیوں نے 3 اربوں کو کیکر حضرموت میں جو نتنیا میں ہے، زدوکوب کرنے کی کوشش کی تھی۔ وہ چلا رہے تھے۔ ’’مرگ بر عرب‘‘ 3 عربوں میں سے دو جو کمسن تھے، فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جبکہ تیسرا زخمی ہوگئے۔ اسرائیل کی پولیس نے اسے بچا لیا۔ کسی بھی مشتبہ شخص کو ہنوز گرفتار نہیں کیا گیا ہے۔ ایک اور واقعہ میں ایک فلسطینی کو گولی مار کر مغربی کنارہ کی نوآبادی تریات اربا میں ہلاک کردیا گیا۔ اس پر اسرائیل کے سرحدی عہدیدار نے حملہ کیا تھا اور اس کا ہتھیار چھین لینے کی کوشش کی تھی۔ ایک فلسطینی خاتون پر بھی گولی چلائی گئی۔ شمالی شہر افولا میں اس فائرنگ سے وہ زخمی ہوگئی۔ گولی مار نے سے پہلے اسرائیلی سیکوریٹی گارڈ نے اس پر چاقو سے حملہ کیا تھا۔ 15 سالہ ہریدی جو ’’کٹر مذہبی جنونی‘‘ لڑکا ہے، چاقوزنی کے ذریعہ زخمی کردیا گیا۔ یروشلم میں ایک فلسطینی نے اس پر حملہ کیا تھا۔ کل فلسطینیوں نے یہودیوں پر چاقو سے چار حملے کئے جن میں ایک خاتون فوجی بھی شامل ہے۔ اس کی بندوق چھین لینے کی کوشش بھی کی گئی۔ یہ واقعہ تل ابیب میں وزارت دفاع کے ہیڈکوارٹرس کے قریب پیش آیا۔

TOPPOPULARRECENT