Tuesday , August 22 2017
Home / عرب دنیا / اسرائیل نے بیت المقدس میں دیوار کی تعمیر شروع کردی

اسرائیل نے بیت المقدس میں دیوار کی تعمیر شروع کردی

یروشلم ، 19 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) فلسطینی شہریوں کی جانب سے یہودی آباد کاروں پر چاقو سے ہونے والے حملوں میں اضافے کے بعد صیہونی مملکت نے مقبوضہ مشرقی بیت المقدس میں یہودی کالونیوں کے دفاع کیلئے ایک نئی دیوارکی تعمیر شروع کی ہے۔ میڈیا کے مطابق اسرائیلی پولیس کی نگرانی میں دیوار کی تعمیر کا کام کل اتوار سے شروع کردیا گیا ہے۔ اتوار کی شام اسرائیلی پولیس کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ اس کے اہلکاروں نے مشرقی بیت المقدس میں جبل المکبر کی بلند چوٹی پر دیوار کی تعمیر شروع کی ہے۔ ابتدائی طورپر دو میٹر لمبے سیمنٹ کے 6 بلاک کھڑے کئے گئے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ ایک عارضی دیوار ہے جس کا مقصد فلسطینی مزاحمت کاروں سے یہودی کالونیوں کو تحفظ فراہم کرنا ہے۔ اسرائیلی پولیس کی جانب سے بنائی گئی دیوار پر عبرانی میں ’عارضی اورموبائل رکاوٹ برائے پولیس‘ کے الفاظ درج ہیں۔ بیت المقدس میں اسرائیلی بلدیہ کی خاتون ترجمان نے بتایا کہ جبل مکبر پر300 میٹر کے علاقے میں ایک عارضی دیوار تعمیر کی جائے گی۔ حالات بہتر ہونے کے بعد اس دیوار کو ہٹا دیا جائے گا۔ یہ دیوار جبل المکبر اور یہودی کالونی ’’ارمون ھانٹزیف‘‘ کے درمیان فلسطینیوں کی آمد ورفت میں رکاوٹ کا کام دے گی۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ یہ دیوار اس مقام پر تعمیر کی جا رہی ہے جہاں سے حالیہ ایام میں فلسطینی نوجوانوں کی جانب سے سنگباری اور پٹرول بم حملوں سے یہودی آباد کاروں اور ان کی گاڑیوں کو نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ اسرائیل کی جانب سے مشرقی بیت المقدس میں وسط میں یہ دیوار ایک ایسے وقت میں تعمیر کی جا رہی ہے جب دوسری جانب حال ہی میں قابض صیہونی فوج بیت المقدس کے اہم داخلی راستوں پر ناکے لگا کرتلاشی کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔

TOPPOPULARRECENT