Thursday , August 24 2017
Home / دنیا / اسرائیل یو این لیگل کمیٹی کا سربراہ منتخب، عرب ممالک کا احتجاج

اسرائیل یو این لیگل کمیٹی کا سربراہ منتخب، عرب ممالک کا احتجاج

اقوام متحدہ ۔ 14 جون (سیاست ڈاٹ کام) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے اپنی چھ مرکزی کمیٹیوں میں سے ایک ‘لیگل کمیٹی’ کی صدارت کے لئے اسرائیل کا انتخاب کر لیا ہے۔ اس اقدام کو فلسطین اور دیگر عرب ممالک کی جانب سے شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ جنرل اسمبلی میں خفیہ رائے شماری کے ذریعہ ہوئے انتخابات میں 109 ممبران نے اسرائیل کے حق میں ووٹ ڈالا۔ جبکہ اسکے خلاف کوئی ووٹ نہیں ڈالا گیا۔ اس موقع پر 23 ممالک نے ووٹ نہیں ڈالا اور 14 ووٹ رد کردئیے گئے جبکہ 43 ممالک نے دیگر ممالک کو کمیٹی کا سربراہ بنانے کے لئے ووٹ ڈالے تھے۔ اسرائیل کے اقوام متحدہ میں سفیر ڈینی ڈینون کا کہنا تھا کہ “یہ لمحہ اسرائیل کے لئے تاریخی اہمیت کا حامل ہے۔ مجھے بہت فخر ہے کہ میں اقوام متحدہ کی کسی کمیٹی کا پہلا اسرائیلی سربراہ ہوں۔” فلسطینی سفیر ریاض منصور نے اس موقع پر سختی سے اعتراض اٹھاتے ہوئے کہا کہ گروپ کو بین الاقوامی قوانین کی دھجیاں اڑانے والے ملک کی بجائے کسی ذمہ دار اور اہل رکن ملک کو اس منصب پر فائز کرنا چاہئیے تھا۔ ریاض منصور کا کہنا تھا کہ “ڈینون ایک قابض ملک کے نمائندے ہیں اور ان کے پاس کمیٹی کی صدارت کے لئے اہلیت نہیں ہے۔ یہ بات انتہائی منفی اور تباہ کن ہے۔ اس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ بین الاقوامی فورم پر ہمارے خدشات کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔” اقوام متحدہ کی لیگل کمیٹی بین الاقوامی قوانین سے متعلق سرگرمیوں کی ذمہ دار ہوتی ہے اور اسرائیلی سفیر کے مطابق وہ سب سے پہلے بین الاقوامی دہشت گردی پر ایک تفصیلی کنونشن کی تشکیل کا کام شروع کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT