Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / اسلامک سنٹر کے قیام ، مکہ مسجد کی تزئین نو کیلئے رقمی منظوری

اسلامک سنٹر کے قیام ، مکہ مسجد کی تزئین نو کیلئے رقمی منظوری

انیس الغرباء کامپلکس کی تعمیر کیلئے 10 کروڑ کی پہلی قسط جاری کرنے کا فیصلہ، ائمہ و مؤذنین کے اعزازیہ میں اضافہ
حیدرآباد۔/24جنوری، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے اسمبلی میں کئے گئے وعدوں کی تکمیل کے سلسلہ میں محکمہ اقلیتی بہبود سے4 علحدہ احکامات کی اجرائی عمل میں آچکی ہے جس کے ذریعہ اسلامک کلچرل اینڈ کنونشن سنٹر، انیس الغرباء اور مکہ مسجد کیلئے فوری رقمی منظوری دی گئی ہے اور ائمہ و مؤذنین کے اعزازیہ کو ایک ہزار سے بڑھا کر 1500/- روپئے ماہانہ کرنے کے احکامات بھی جاری کئے گئے۔ چیف منسٹر نے اسمبلی میں کئے گئے تقریباً 19 وعدوں کے سلسلہ میں سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل سے تفصیلات طلب کی اور ان پر عمل آوری کے امکانات پر جائزہ لیا۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے پہلے مرحلہ میں اہم اعلانات اور ان کے لئے درکار بجٹ کی تفصیلات سے واقف کرایا جس پر چیف منسٹر نے اسلامک کلچرل اینڈ کنونشن سنٹر کی تعمیر کیلئے 40 کروڑ کے منجملہ 10 کروڑ روپئے کی فوری اجرائی کی ہدایت دی ہے۔ جی او آر ٹی 10 کے مطابق منی کنڈہ میں واقع درگاہ حضرت حسین شاہ ولی ؒ کی 6 ایکر 15 گنٹے اراضی پر عالیشان تلنگانہ اسلامک کلچرل اینڈ کنونشن سنٹر کی 40کروڑ روپئے سے تعمیر کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اسلامک سنٹر کے قیام کا مقصد اسلام کے بارے میں غلط پروپگنڈہ کی نفی کرنا اور مختلف طبقات اور مذاہب کے درمیان ہم آہنگی کو فروغ دینا ہے۔ حکومت نے چیف انجینئر آر اینڈ بی سے خواہش کی ہے کہ وہ تفصیلی تخمینہ اور منصوبہ تیار کرتے ہوئے حکومت کو پیش کرے۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ چیف انجینئر آر اینڈ بی کو 10 کروڑ روپئے جاری کریں، یہ رقم حکومت کی جانب سے وقف بورڈ کو دی جانے والی گرانٹ اِن ایڈ کے بجٹ سے جاری کی جائے گی۔ تعمیری کام چیف انجینئر آر اینڈ بی کی نگرانی میں انجام دیا جائے گا۔ ایک اور جی او آر ٹی 9 کے تحت حکومت نے انیس الغرباء نامپلی کیلئے حکومت کی جانب سے الاٹ کردہ 4000 گز اراضی پر ہمہ مقصدی کامپلکس کی منظوری دی ہے۔ کامپلکس کے ذریعہ نہ صرف یتیم بچوں کی ضروریات کی تکمیل ہوگی بلکہ ساتھ میں کمرشیل سرگرمیاں بھی انجام دی جائیں گی۔ حکومت نے ایک مثالی یتیم خانہ اور دیگر سہولتوں کیلئے کامپلکس کی تعمیر کو منظوری دی ہے۔ چیف انجینئر آر اینڈ بی کو تعمیر کیلئے 20 کروڑ کے منجملہ 10 کروڑ روپئے پہلی قسط کے طور پر جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ چیف انجینئر آر اینڈ بی ہمہ مقصدی کامپلکس کا منصوبہ اور تخمینہ حکومت کو پیش کریں گے۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ حکومت کی جانب سے گرانٹ اِن ایڈ کی رقم سے 10کروڑ روپئے چیف انجینئر آر اینڈ بی کو جاری کریں تاکہ تعمیراتی کاموں کا آغاز ہوسکے۔جی او آر ٹی11  کے ذریعہ تاریخی مکہ مسجد کی مرمت و تزئین نو کے سلسلہ میں 8 کروڑ 48لاکھ روپئے کو منظوری دی گئی ہے۔ مکہ مسجد کی چھت میں بارش کا پانی اترنے سے چھت بوسیدہ ہونے کی شکایات ملی ہیں، اس کے علاوہ مسجد کی عظمت رفتہ کی بحالی اور دیگر تعمیری کام اور تزئین نو کیلئے جامع منصوبہ تیار کرتے ہوئے عمل کیا جائے گا۔ سینٹیشن، سیوریج، ڈرینج، الکٹریکل کاموں کے علاوہ سیکورٹی کیلئے درکار اُمور کی تکمیل کی جائے گی۔ ڈائرکٹر آرکیالوجی نے ماہرین کی نگرانی میں8.48 کروڑ روپئے کا تخمینہ تیار کیا ہے۔ حکومت نے مسجد کے تحفظ اور ہیرٹیج کی بحالی کیلئے اس تخمینہ کو منظوری دے دی ہے۔ یہ اخراجات وقف بورڈ کی گرانٹ اِن ایڈ سے ادا کئے جائیں گے اور ڈائرکٹر آرکیالوجی کی نگرانی میں کاموں کی تکمیل ہوگی۔ حکومت نے تلنگانہ میں 5000 مساجد کے ائمہ اور مؤذنین کو ماہانہ ایک ہزار روپئے کی اسکیم شروع کی ہے جس کیلئے 8934 ائمہ اور مؤذنین نے درخواستیں داخل کیں۔ چیف منسٹر نے ماہانہ اعزازیہ کی رقم کو بڑھا کر 1500 کرنے کا اسمبلی میں تیقن دیا تھا جس کے مطابق سکریٹری اقلیتی بہبود نے احکامات جاری کرتے ہوئے چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ کو اپریل 2017سے نئے اعزازیہ پر عمل آوری کی ہدایت دی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT