Tuesday , October 24 2017
Home / دنیا / اسلامی تعلیمات پر گہرے غور و خوض کی ضرورت : اسلامی دانشور

اسلامی تعلیمات پر گہرے غور و خوض کی ضرورت : اسلامی دانشور

انقرہ ۔ 21 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ترکی کے اسلامی دانشور فتح اللہ گلین نے آج ایک اہم بیان دیتے ہوئے کہا کہ عراق میں نام نہاد دولت اسلامیہ جو کچھ بھی کررہی ہے اس کیلئے مذمت کے الفاظ بھی میرے پاس ناکافی ہیں۔ آج دنیا بھر سے اربوں مسلمانوں کے ساتھ میں خود بھی اپنا رنج و غم بانٹ رہا ہوں کیونکہ اسلام کے نام پر دولت اسلامیہ کے دہشت گرد ایسے کام انجام دے رہے ہیں جن کی اسلام اجازت نہیں دیتا۔ مذہب کے نام پر خون خرابہ کی تو کسی بھی مذہب نے حمایت نہیں کی۔ پیرس حملوں میں جن لوگوں نے اپنی قیمتی جانیں گنوائیں لبنان کے شہر بیروت میں شیعہ مسلمان جاں بحق ہوئے اور عراق کے اطراف و اکناف میں سنی مسلمانوں کی جس ہلاکت کا سلسلہ جاری ہے، اس کیلئے میرا دل خون کے آنسو روتا ہے۔ کیا وہ سب لوگ انسان نہیں تھے؟ مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ اب سازشی منصوبوں پر غوروخوض کرنا چھوڑ دیں جس کی وجہ سے ہم اپنے سماجی مسائل کی یکسوئی سے دور ہوتے جارہے ہیں اور صرف سازشی ٹولوں کے بارے میں سوچ سوچ کر اپنا وقت برباد کررہے ہیں۔ اصل سوال یہ ہیکہ کیا مسلم قوم خود ہی دولت اسلامیہ میں نئی بھرتیوں کی راہ ہموار کررہی ہے؟ آج مغربی ممالک کے کئی شہروں سے یہ خبریں سننے کو ملتی ہیں کہ لوگ دولت اسلامیہ کی صفوں میں شامل ہونے کی کوشش کررہے تھے تاہم عین وقت پر انہیں گرفتار کرلیا گیا؟ آخر ایسا کیوں؟ کیا ہم اسلام کی تعلیمات سمجھنے سے قاصر ہیں؟ کیا ہمیں اسلامی تعلیمات کا ایک بار پھر بغور مطالعہ نہیں کرنا چاہئے؟۔

TOPPOPULARRECENT