Tuesday , August 22 2017
Home / کھیل کی خبریں / اسلام آباد یونائیٹیڈ پاکستان سوپر لیگ کا پہلا چمپئن

اسلام آباد یونائیٹیڈ پاکستان سوپر لیگ کا پہلا چمپئن

دبئی ، 24 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) اسلام آباد یونائیٹیڈ نے ڈیوان اسمتھ اور براڈ ہاڈین کی شاندار بیٹنگ کے بدولت پاکستان سوپر لیگ ( پی ایس ایل) کے ٹائٹل کے حصول کے فیصلہ کن معرکے میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 6 وکٹوں سے شکست دے کر لیگ کے پہلے چمپئن کا تاج پہن لیا۔ دبئی کرکٹ اسٹیڈیم میں منگل کی رات کھیلے گئے پی ایس ایل کے فائنل میں اسلام آباد ٹیم کے کپتان مصباح الحق نے ٹاس جیت کر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی۔ کوئٹہ کی اننگز کا آغاز اچھا نہیں رہا۔ کیون پیٹرسن نے دوسری وکٹ کی شراکت میں احمد شہزاد کیساتھ مل کر اسکور کو 33 رنز تک پہنچایا اور 18 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ شہزاد نے سری لنکا کے سابق کپتان کمار سنگاکارا کے ساتھ تیسری وکٹ کی شراکت میں 87 رنز کا اضافہ کیا اور کوئٹہ کو 120 رنز کی مستحکم پوزیشن پر لاکھڑا کیا۔ سنگا برق رفتار 55 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ شہزاد 64 رنز کی اچھی اننگز کھیلنے کے بعد محمد سمیع کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔ کپتان سرفراز احمد صرف 3 رنز کا اضافہ کرکے پویلین لوٹے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے مقررہ اوورز میں 174/7 اسکور کئے۔ اسلام آباد کی جانب سے اینڈرے رسل نے 3 اور محمد عرفان نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔اسلام آباد کی جانب سے شرجیل خان اور اسمتھ نے پراعتماد آغاز کیا اور پہلے ہی اوور میں 15 رنز حاصل کرتے ہوئے 54 رنز کی شراکت قائم کی۔ تاہم شرجیل 13 رنز بنا کر ناتھن مک کلم کا شکار بنے۔ اسمتھ نے پلے آف مرحلے میں پشاور زلمی کے خلاف سست بیٹنگ کا ازالہ فائنل میں جارحانہ بلے بازی سے کیا اور ہاڈین کے ساتھ دوسری وکٹ میں اسلام آباد کو فتح کے قریب لے آئے۔ دونوں نے اس کامیاب شراکت داری میں اپنی نصف سنچریاں مکمل کیں۔ دونوں کے درمیان 85 رنز کی شراکت بنی۔ اسمتھ 7 چوکوں اور 4 چھکوں کی مدد سے 73 رنز کی شاندار اننگز کھیل کر 139 کے اسکور پر آؤٹ ہوئے تو اسلام آباد ٹائٹل کے حصول سے 26 رنز دور تھا۔ رسل 3 گیندوں کے مہمان بنے اور ایک چھکے کی مدد سے 7 رنز بناسکے۔ خالد لطیف آؤٹ ہونے والے آخری بلے باز تھے جو 16 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ ہاڈین نے نئے بیٹسمن مصباح الحق کے ساتھ مل کر اسلام آباد یونائیٹیڈ کو پاکستان کی تاریخ کی پہلی ٹی ٹوئنٹی لیگ کی چمپئن ٹیم بنا دیا۔ فاتحانہ رن کپتان مصباح نے لیا۔ ہاڈین 61 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے جبکہ مصباح ایک رن بنا کر چمپئن کپتان بن کر لوٹے۔ اسمتھ کو میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ کراچی کنگز کے روی بوپارا کو لیگ کا قیمتی کھلاڑی قرار دیا گیااور ان کی غیرموجودگی میں
پیٹرسن نے ان کا ایوارڈ وصول کیا۔ لاہور قلندرز کے عمر اکمل کو پی ایس ایل کا بہترین فیلڈر اور سب سے زیادہ رنز بنانے پر لیگ کے بہترین بلے باز کا ایوارڈ دیا گیا۔ اسلام آباد کے رسل کو بہترین بولر کا ایوارڈ دیا گیا۔ لاہور قلندرز کو اسپرٹ آف کرکٹ کا ایوارڈ دیا گیا۔ چیئرمین پی سی بی شہر یار خان اور چیئرمین پی ایس ایل نجم سیٹھی نے اسلام آبا یونائیٹیڈ کے کپتان مصباح کو لیگ کی ٹرافی تھما دی۔ قبل ازیں فائنل کھیلنے والی دونوں ٹیموں کے کھلاڑیوں سے مہمان خصوصی اور پی سی بی کے چیئرمین شہریار خان نے مصافحہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT