Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اسلام میں ازدواجی زندگی کے رہنمایانہ اُصول مکمل انصاف پر مبنی

اسلام میں ازدواجی زندگی کے رہنمایانہ اُصول مکمل انصاف پر مبنی

مردوخواتین دونوں کے حقوق مکمل محفوظ‘ زبیراحمد ایڈوکیٹ جنرل سکریٹری مسلم پرسنل لاء ظہیرآباد کی پریس کانفرنس

ظہیرآباد۔10نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) جنرل سکریٹری مسلم پرسنل لاء  بورڈ شاخ ظہیرآباد جناب زبیر احمد ایڈوکیٹ نے آج یہاں اسلامک سنٹر میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانان ظہیرآباد آئین ہند کے تحت حاصل شدہ مسلم پرسنل لاء میں مداخلت کی مخالفت کرتے ہیں ۔ ساتھ ہی حکومت ہند اور ویمن کمیشن آف انڈیا کی جانب سے سپریم کورٹ میں داخل کئے گئے حلفنامے کی سخت مذمت کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کرتے ہیںکہ وہ اس سے دستبرداری اختیارکرے ‘ نیز لاء کمیشن آف انڈیا کے سوالنامہ کو آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی جانب سے مسترد کئے جانے کے اقدام کی بھی سراہنا کرتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آل انڈیا مسلم پرسنل اء بورڈ کی ہدایت پر شروع کردہ دستخطی مہم پر جہاں ملک کے 20 کروڑ مسلمانوں نے لبیک کہا ‘ وہیں حلقہ اسمبلی ظہیرآباد کے مختلف سیاسی و غیر سیاسی تنظیموں و مختلف مسلکوں سے وابستہ مسلم خواتین و مرد حضرات نے اس مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور واضح کیا کہ وہ مسلم پرسنل میں پوری طرح محفوظ ہیں ۔ انہوں نے پُرالفاظ میں کہا کہ جو حقوق اور تحفظ شریعت اسلامی نے عورتوں کو دیئے ہیں ‘ وہ کسی اور مذہب سے نہیں آیاہے ‘ جہاں تک اسلام میں تعداد ازدواج کی اجازت کا سوال ہے وہ انصاف کی کڑی اور شرائط کے تابع ہے ‘ ورنہ ایک ہی بیوی پر اکتفا کرنے کے احکام ہیں ۔ انہوں نے اعداد و شمار کی شرح 3.5 فیصد ہے جب کہ دیگر اقوام میں 6.8 فیصد ہے اور یہ کہ ایک مسلمان عورت دوسری بیوی کے درجہ میں بھی تمام سماجی و مذہبی حقوق کی حقدار ہے ۔ حکومت کو یہ زیب نہیں دیتا کہ وہ طلاق پر پابندی لگاکر عورت کو اسی شوہر کے ساتھ زندگی بسر کرنے پر مجبور کرے ‘ جس نے اسے طلاق دے دی ہو ‘ طلاق چاہے ایک ہو ‘ دو دہوں یا تین ہوں ‘ اسلام میں اس عمل کو ناپسندیدہ قرار دیا گیا ہے ۔ مسلم پرسنل لاء میں مرد و عورت دونوں کو ایک دوسرے کا احترام کرتے ہوئے ازدواجی زندگی گزارنے کیلئے رہنمایانہ اصول ہیں۔ انہوں نے مسلم پرسنل میں مداخلت کے حامیوں سے پُرزور الفاظ میں کہاکہ وہ مسلم پرسنل لاء میں مداخلت کرنے کے بجائے جہیز کے سلسلہ میں زائد از 26 ہزار سالانہ ہونے والی اموات ‘ ہر 15منٹ میں ہونے والی عصمت ریزی ‘ ہر سات سیکنڈ میں مادر رحم میں ہونے والے بچوں کے قتل نیز 41فیصد  ہونے والے گھریلو تشدد کے واقعات کے سدباب کیلئے ٹھوس اقدامات کرے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ شریعت محمدیؐ میں کسی قسم کی مداخلت مسلمانوں کیلئے ناقابل قبول ہے ۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ مسلم پرسنل لا میں مداخلت کے خلاف ظہیرآباد میں شروع کردہ دستخطی مہم میں 62 ہزار افراد نے اپنی دستخطیں ثبت کیں جن میں خواتین کی تعداد 32ہزار ہے اور یہ کہ تمام دستخط شدہ فارمس صدر  جمہوریہ ہند ‘ویمنس کمیشن آف انڈیا اور لا کمیشن آف انڈیا کو بذریعہ ای میل ترسیل کردیئے گئے ہیں جب کہ دستخط شدہ فارمس ‘ حیدرآباد میں مقیم آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ذمہ داروں کے حوالے کردیئے جائیں گے ۔ صدر مسلم پرسنل لاء شاخ ظہیرآباد مولانا محمود پٹیل قاسمی نے ان تمام افراد کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا جنہوں نے دستخطی مہم کو کامیابی سے ہمکنار کرنے میں اہم رول ادا کیا ۔ اس موقع پر مولانا مدثر دیشمکھ ‘ مولانا عتیق احمد قاسمی ‘ مولانا عبدالصبور قاسمی ‘ سید ضیاء الدین قاضی ‘ مولانا عبدالمجیب قاسمی ‘ مفتی نذیر احمد ‘ سید عتیق حقامی ‘ ایم اے سمیع ایڈوکیٹ ‘ محمد ایوب ‘ محمد ناظم الدین غوری ‘ محمد عبدالماجد ‘محمد عبدالقدیر ‘ محمد اطہر ‘ نورالحسن غوری ‘ محمد اقبال احمد ‘ محمد لقمان ‘ محمد نصیر ‘ محمد سلیم ‘ محمد فاروق علی ‘ اعجاز پاشاہ ‘ امیر الدین ‘ بشیر احمد ‘ محمد معین الدین اور دوسرے پریس کانفرنس میں موجود تھے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT