Friday , June 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اسلام میں جہیز اور ضیافت کا تصور محال

اسلام میں جہیز اور ضیافت کا تصور محال

شیعہ برادری کے رشتوں کا دوبہ دو پروگرام، جناب عابد صدیقی ، جناب میر باقر علی خاں کا خطاب
حیدرآباد۔/12مارچ، ( دکن نیوز) ادارہ ’سیاست‘ اور میناریٹیز ڈیولپمنٹ فورم اور سیرت الزہرہ کمیٹی کے زیر اہتمام آج دیوڑھی نواب عنایت جنگ بہادر پرانی حویلی میں شیعہ برادری کیلئے نواں دوبہ بدو ملاقات پروگرام منعقد کیا گیا۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے صدارت کی۔ جناب میر باقر علی خان ( کنیڈا ) نے بحیثیت مہمان خصوصی اپنے خطاب میں کہا کہ اسلام میں لڑکی کی جانب سے جہیز دینے کا کوئی تصور نہیں ہے اور نہ ہی شادی کی تقریب میں تناول طعام سے مہمانوں کی ضیافت کرنے کا طریقہ ہے۔ پیغمبر اسلام حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی صاحبزادی حضرت بی بی فاطمہ ؓ کا نکاح نہایت سادگی کے ساتھ کرکے ہمارے سامنے ایک مثال قائم کی۔ انہوں نے کہا کہ آج مسلم معاشرہ میں دولت و ثروت، حسن و جمال اور ظاہری شان و شوکت کو اہمیت دی جارہی ہے جو اسلامی تعلیمات کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ شادی سے پہلے ماں باپ، لڑکا اور لڑکی کے ساتھ کونسلنگ کا اہتمام کیا جانا چاہیئے تاکہ شادی کے بعد کے حالات میں کوئی تشنگی اور اختلافات رونما نہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ لڑکیوں کی تعلیم ہماری سماجی ذمہ داری ہے۔ آج کے اس دور میں لڑکیوں کو خود مکتفی بنانا چاہیئے۔ نواب اشرف حسین مہمان اعزازی نے کہا کہ اسلام نے انسانی فلاح و بہبود کو اولین اہمیت دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان دین کو چھوڑ کر کلچر کو اہمیت دے رہے ہیں۔ مذہب نے انفرادی اور اجتماعی زندگی کے لئے رہنمایانہ اصول بنائے ہیں اور ان اصولوں کی پاسداری کے ذریعہ ہی ہم معاشرہ میں امن و چین قائم کرسکتے ہیں۔ ابتداء میں جناب علی رضا صدر سیرت الزہرہ کمیٹی نے خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ ادارہ سیاست، ایم ڈی ایف کے تعاون اور سرپرستی کے باعث شیعہ برادری کے کئی رشتے طئے ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صلاح و مشورہ آج کی اہم ضرورت ہے۔ جناب علی رضا نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ وہ رضاکارانہ طور پر اور سادگی کے ساتھ شادی کرنے کو ترجیح دیں کیونکہ سادگی ہی اسلام کی روح ہے۔ جناب عابد صدیقی صدر ایم ڈی ایف نے کہا کہ مسلمانوں کے لئے آج سب سے بڑا سنگین مسئلہ شادی بیاہ کا بھی ہے۔ ہماری فرسودہ روایات اور غیر اسلامی رسومات کے باعث سینکڑوں لڑکیاں سہاگ کی نعمت سے محروم ہیں۔ مسلم تنظیموں اور علمائے کرام کو اس مسئلہ پر توجہ دینا چاہیئے۔ انہوں نے سیاست اور ایم ڈی ایف کی جانب سے کئے گئے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے جناب زاہد علی خاں کی تحریک کے نتیجہ میں مثبت تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں۔ جناب اقبال احمد اقبال نے اپنا تازہ کلام اس موقع پر پیش کیا۔ دوبہ دو ملاقات پروگرام میں جناب توصیف عباس، محترمہ فاطمہ باقر علی خاں مقیم کنیڈا،انبساط بانو، پرنسپل حیدرآباد انسٹی ٹیوٹ آف ایکسلز وقارآباد، فراست علی باقری، مہدی خلیل اور دوسروں نے شرکت کی۔ جناب ایم اے قدیر آرگنائزنگ پریسیڈنٹ نے والدین اور سرپرستوں کا خیرمقدم کیا۔ ڈاکٹر دردانہ، کوثر جہاں، ریحانہ نواز اور مہر النساء نے کونسلنگ کے فرائض انجام دیئے۔ شیعہ برادری کے دوبہ دو ملاقات پروگرام میں ایک سو سے زائد والدین اور سرپرستوں نے شرکت کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT