Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / اسلام یا مسلمانوں کی مخالفت نہ کرنے امریکیوں سے اپیل

اسلام یا مسلمانوں کی مخالفت نہ کرنے امریکیوں سے اپیل

ساری دنیا کے مسلمان داعش کی گمراہ کن تشریحات کو مسترد کرچکے ہیں، اوباما کا خطاب
واشنگٹن۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی ٹاؤن سان برنارڈینو میں 14 افراد کی ہلاکت کا سبب بننے والے دہشت گرد حملے کے بعد ملک میں بڑھتے مخالف مسلم جذبات و احساسات کے درمیان صدر براک اوباما نے اپنے شہریوں سے آج کہا کہ وہ کسی بھی قسم کی مشتبہ سرگرمیوں کے خلاف چوکس رہیں اور اپیل کی کہ اسلام کے خلاف جذبات و احساسات پیدا نہ ہونے دیں۔ صدر اوباما نے اپنے ہفتہ وار ویب اور ریڈیو خطاب میں امریکیوں سے کہا کہ وہ ایک دوسرے کے خلاف کسی لڑائی میں ملوث نہ ہوں جس کی تشریح امریکہ اور اسلام کے درمیان لڑائی کے طور پر کی جائے گی، کیونکہ اسلامک اسٹیٹ (داعش) بھی یہی چاہتا ہے اور ایسی لڑائی کی صورت میں نہ صرف داعش کے عزائم کو تقویت ملے گی بلکہ امریکی داخلی سلامتی پامال ہوگی۔ اوباما نے کہا کہ ’’پیرس اور سان برنارڈینو دہشت گرد حملوں کے بعد مَیں جانتا ہوں کہ کئی امریکی پوچھ رہے ہیں کہ میں کیا کرسکتا ہوں؟ ہمیشہ کی طرح سب سے پہلے ہمیں چاہئے کہ پوری طرح چوکس رہیں ‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ’’اسلامک اسٹیٹ جیسے دہشت گرد گروپ مذہبی خطوط پر ہمیں تقسیم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ ساری دنیا کے مسلمان داعش کی گمراہ کن تشریحات مسترد کرچکے ہیں اور ہمیں بھی ان تشریحات کو مسترد کردینا چاہئے۔ اوباما نے کہا کہ عیسائی اور یہودی عبادت گاہوں کے ذمہ دار مقامی مساجد کو پہونچ کر آپسی اتحاد کا مظاہرہ کریں گے اور امریکی عوام کئی بہادر مسلم سپاہیوں کے مشکور ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT