Wednesday , August 23 2017
Home / سیاسیات / اسمبلی انتخابات کی آج رائے شماری کیلئے تیاری

اسمبلی انتخابات کی آج رائے شماری کیلئے تیاری

صرف ممتا بنرجی اقتدار پر واپسی کے قابل ، دیگر برسراقتدار پارٹیوں کو ناکامی کا امکان، عوام تبدیلی کی تائید میں :ایکزٹ پولس
نئی دہلی ۔ 18 مئی ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) اعلیٰ سطحی ریاستی اسمبلی انتخابات مغربی بنگال ، ٹاملناڈو ، آسام ، کیرالا اور پوڈوچیری کی رائے شماری کل صبح سے شروع ہوجائے گی اور اولین رجحانات توقع ہے کہ ایک گھنٹہ بعد دستیاب ہوں گے۔ 12 بجے تک انتخابی کامیابی حاصل کرنے والوں کی واضح تصویر سامنے آجائے گی ۔ الیکشن کمیشن کے ارکان عملہ نے کہاکہ رائے شماری کا آغاز 8:00 بجے صبح اور اختتام 3:00 بجے ہوگا ۔ مختلف ٹی وی چینلس کے ایکزٹ پولس پر 16 مئی کو کہا گیا ہے کہ آسام ، ٹاملناڈو اور کیرالا ایسا معلوم ہوتا ہے کہ تبدیلی کی تائید میں رائے دہی ہوئی ہے ۔ شمال مشرقی ریاست میں بی جے پی کی اولین حکومت قائم ہوگی اور کانگریس کی حکومت اقتدار سے بیدخل ہوجائے گی ۔ امکان ہے کہ کانگریس کو کیرالا میں بھی ناکامی ہوگی ۔ پیش قیاسی کی گئی ہے کہ ڈی ایم کے انا ڈی ایم کے کو شکست دیتے ہوئے ٹاملناڈو میں دوبارہ برسراقتدار آجائے گی ۔ صرف مغربی بنگال ایسا معلوم ہوتا ہے کہ ایکزٹ پولس کے بموجب ترنمول کانگریس کو دوبارہ منتخب کرے گا جس کی قیادت چیف منسٹر ممتا بنرجی کرتی ہیں۔ وہ بائیں بازو کانگریس اتحاد کو واضح طورپر شکست دیتے ہوئے دوسری میعاد کیلئے اقتدار پر اپنی گرفت برقرار رکھنے میں کامیاب ہورہی ہیں ۔

امکان ہے کہ کانگریس کے لئے یہ بات تسلی بخش ہو کہ ننھے سے مرکز زیرانتظام علاقہ پوڈوچیری میں اس کے ڈی ایم کے کے ساتھ اتحاد کو کامیابی حاصل ہوگی ۔ رائے شماری سے تقریباً 8,300 امیدواروں کی قسمت کا بشمول چیف منسٹر ترون گوگوئی (آسام ) اور چیف منسٹری کے بی جے پی امیدوار سربانندا سونووال اور ہیمنت بسواس ، چیف منسٹر جیہ للیتا اور کروناندھی ٹاملناڈو میں ، چیف منسٹر اومن چنڈی ، سی پی آئی ایم قائدین وی ایس اچھوتا نندن اور پینا رائے وجین کیرالا میں ، چیف منسٹر ممتا بنرجی اور سی پی آئی ایم کے سوریا کانتا مشرا کا مغربی بنگال میں اور چیف منسٹر ایم رنگا سوامی کا پوڈوچیری میں قسمت کا فیصلہ ہوجائے گا ۔ الیکشن کمیشن کے رہنمایانہ خطوط کے بموجب ڈاک سے آئے ہوئے ووٹ آدھے گھنٹے تک شمار کرنے کے بعد برقی رائے دہی مشینوں کے ووٹوں کی گنتی کا کام شروع ہوجائے گا ۔ بیلٹ یونٹ سینئر انتخابی عہدیداروں اور رائے شماری کے امیدواروں کے ایجنٹوں کی موجودگی میں اپنا کام شروع کرے گا۔ نتائج ہر مشین سے حاصل ہوتے ہی ظاہر کردیئے جائیں گے ۔ کاغذی علامتی آڈیٹ یا رائے دہندے کی توثیق کی کاغذی آڈٹ ٹریل استعمال کی گئی ہے ۔ رائے شماری کے ایجنٹ کاغذی پرچیوں کے شمار کا بھی مطالبہ کرسکتے ہیں جو رائے دہی مشین سے منسلک ڈرافٹ باکس میں موجود ہوں گی ۔ قطعی رائے شماری ریٹرننگ آفیسر کرے گا ۔ نتائج کے اعلان کے بعد کامیاب ہونے والے امیدواروں کے نام گزٹ میں شائع کئے جائیں گے ۔ گزٹ اعلامیہ آئندہ قانون ساز اسمبلیوں کی تشکیل کے عمل کا آغاز ہوگا ۔ تمام ریاستوں میں اس عمل کے ذریعہ نئی حکومتیں تشکیل دی جائیں گی ۔ تمام سیاسی پارٹیاں بے چینی سے اسمبلی انتخابات کے نتائج کی منتظر ہیں کیونکہ سیاسی مبصرین کے بموجب ان ریاستی انتخابات کے نتائج آئندہ لوک سبھا نتائج کیلئے عوام کے رجحان کا تعین کردیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT