Wednesday , June 28 2017
Home / شہر کی خبریں / اسمبلی اور کونسل اجلاس کا آج سے آغاز

اسمبلی اور کونسل اجلاس کا آج سے آغاز

ٹی آر ایس لیجسلیچر پارٹی کا اجلاس ، حکمت عملی کو قطعیت

حیدرآباد۔/15 ڈسمبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی لیجسلیچر پارٹی کا اجلاس آج چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی صدارت میں تلنگانہ بھون میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں ریاستی وزراء، ارکان اسمبلی اور کونسل نے شرکت کی۔ لیجسلیچر پارٹی نے کل 16 ڈسمبر سے شروع ہونے والے اسمبلی اور کونسل کے اجلاس کیلئے پارٹی کی حکمت عملی کو قطعیت دی۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ وزراء اور ارکان کو ہدایت دی کہ وہ اجلاس میں پابندی سے شرکت کریں اور اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے مختلف مسائل پر اٹھائے جانے والے سوالات کا موثر انداز میں جواب دیا جائے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ اسمبلی اورکونسل میں عوامی مسائل کی یکسوئی کی کوشش کی جائے۔ اس کے علاوہ حکومت کی مختلف فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات کو بہتر انداز میں اُجاگر کیا جائے تاکہ عوام تک حکومت کی کارکردگی سے متعلق اچھا پیام پہنچے۔ انہوں نے ارکان سے کہا کہ وہ اس بات کی کوشش کریں کہ ایوان کا وقت ضائع ہونے نہ پائے۔ برسر اقتدار پارٹی ارکان کو ڈسپلین اور سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا چاہیئے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر حکومت اسمبلی اور کونسل اجلاس کی تاریخ میں توسیع کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اجلاس کو حکومت کی اسکیمات عوام تک پہنچانے کے بہتر ذریعہ کے طور پر استعمال کیا جانا چاہیئے۔ پارٹی کے چیف وہپ کے ایشور نے بعد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بزنس اڈوائزری کمیٹی نے 30 ڈسمبر تک اجلاس کے انعقاد کا فیصلہ کیا ہے۔ وقفہ سوالات کے وقت میں ایک گھنٹہ سے دیڑھ گھنٹہ کی توسیع کی گئی ہے۔ اجلاس نے طئے کیا کہ 9 مختلف موضوعات پر مباحث ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایوان میں اپوزیشن جماعتوں کے رویہ کی بنیاد پر توسیع کا فیصلہ کیا جائے گا۔ گورنمنٹ چیف وہپ کے مطابق اجلاس کے پہلے دن وقفہ سوالات کے فوری بعد نوٹ بندی اور اس کے اثرات پر مباحث کا آغاز ہوگا۔ ضرورت پڑنے پر ان مباحث پر مشتمل رپورٹ مرکز کو روانہ کی جائے گی جس میں اس صورتحال سے اُبھرنے کیلئے تلنگانہ حکومت سے تعاون کی درخواست کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں غیر ضروری طور پر حکومت اور اس کی اسکیمات کو نشانہ بنارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کسی بھی عوامی مسئلہ پر مباحث کیلئے تیار ہے تاہم اپوزیشن کی ذمہ داری ہے کہ وہ اجلاس کے موثر انعقاد میں تعاون کرے۔ بتایا جاتا ہے کہ لیجسلیچر پارٹی میں اپوزیشن کے امکانی الزامات کا موثر جواب دینے کا فیصلہ کیا گیا اور اس سلسلہ میں مختلف اُمور کی ذمہ داری مختلف ارکان میں تقسیم کی گئی۔ وزراء کو ہدایت دی گئی کہ وہ اپنے متعلقہ محکمہ جات سے متعلق سوالات اور مباحث کے موقع پر پوری تیاری کے ساتھ موجود رہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT