Thursday , September 21 2017
Home / سیاسیات / اسمبلی نتائج ‘ بی جے پی کیلئے مایوس کن ہونگے

اسمبلی نتائج ‘ بی جے پی کیلئے مایوس کن ہونگے

ملک میں کوئی مودی لہر نہیں : سینئر صحیفہ نگار این رام کی رائے
ممبئی 5 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) این ڈی اے حکومت شدید مشکلات کا شکار ہے اور اسے یہ غور کرنے کی ضرورت ہے کہ مختلف شعبہ جات سے تعلق رکھنے والی غیر سیاسی شخصیتوں نے اپنے ایوارڈز کیوں واپس کردئے تھے جبکہ ملک میں سماج کو تقسیم کرنے کی کوششیں کو رہی ہیں۔ سینئر صحیفہ نگار این رام نے یہ بات کہی ۔ این رام ممبئی میں ایک دو روزہ سمینار سے خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ پانچ ریاستوںم یں ہونے والے اسمبلی انتخابات میں بی جے پی اور حلیفوں کی کارکردگی ناقص رہے گی کیونکہ ملک میں کوئی مودی لہر نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات واضح ہے کہ مودی حکومت ایک نظریہ کے تابع چل رہی ہے اور ملک میں عدم رواداری کا جو ماحول گرما رہا ہے وہ اتفاقی یا حادثاتی نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صرف اتنا کہنا بھی کافی نہیں ہے کہ ملک میں عدم رواداری ہے ۔ یہ صرف یکا دوکا واقعات نہیں ہیں اور نہ حادثاتی واقعات ہیں۔ یہ صرف ایک نظریہ پر عمل کرنا ہے ۔ لیکن وہ یہاں سازش کے نظریہ کی تشہیر نہیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ یہ بھی نہیں کہنا چاہتے کہ یہ فاشزم ہے اور اس سے ہندوستان کو خطرہ ہے ۔ یہ کہنا کافی ہے کہ یہ نیم فاشسٹ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ این ڈی اے حکومت شدید مسائل کا شکار ہے اور ملک کی پانچ ریاستوں میں جو اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں وہاں بی جے پی اور اس کی حلیف جماعتوں کے ووٹوں کے تناسب میں گراوٹ آئیگی کیونکہ ملک میں کوئی مودی لہر نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 2014 میں بی جے پی کو جو 31 فیصد ووٹ حاصل ہوئے تھے وہ بھی کسی عوامی منتخبہ اکثریتی حکومت کو ملنے والے لوک سبھا کی تاریخ کے سب سے اقل ترین ووٹ تھے ۔ مجوزہ اسمبلی انتخابات میں بھی بی جے پی اور اس کی حلیفوں کے ووٹوں کے تناسب میں کمی آئیگی ۔

TOPPOPULARRECENT