Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اسمبلی نشستوں میں اضافہ کی مہم تیز تر

اسمبلی نشستوں میں اضافہ کی مہم تیز تر

ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ کے وفد کی مرکز سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 13 اگست (سیاست نیوز) مرکزی حکومت کے اس اعلان کے باوجود کہ وہ فی الحال آندھراپردیش اور تلنگانہ ریاستوں میں اسمبلی نشستوں کی تعداد میں اضافہ نہیں کرسکتی۔ برسراقتدار ٹی آر ایس دہلی میں اسمبلی نشستوں میں اضافہ کیلئے راہ ہموار کرنے کی کوششوں میں ہے۔ ٹی آر ایس ان تمام ارکان کو جو دوسری پارٹیوں سے الگ ہوکر ٹی آر ایس میں شامل ہوئے ہیں۔ 2019ء کے اسمبلی انتخابات میں جگہ فراہم کرنے کیلئے اسمبلی نشستوں میں اضافہ کیلئے کوشاں ہے۔ کل ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ نے بی ونود کمار کی قیادت میں مرکزی مملکتی وزیرداخلہ ہنس رج گنگارام سے ملاقات کی اور دونوں تلگو ریاستوں میں اسمبلی نشستوں میں اضافہ کیلئے نمائندگی کی اور نشاندہی کی کہ اے پی تنظیم جدید قانون 2014ء میں اس کی گنجائش ہے۔ مرکزی وزیر سے کہا گیا کہ دستور میں ترمیم کئے بغیر دونوں ریاستوں میں اسمبلی حلقوں کی نئی حدبندی کی جاسکتی ہے۔ دونوں تلگو ریاستوں کے چیف منسٹرس مرکز پر زور دے رہے ہیں کہ آندھراپردیش تنظیم جدید قانون کے تحت کئے گئے وعدے پورے کرتے ہوئے تلنگانہ میں اسمبلی حلقوں کی تعداد 119 سے بڑھا کر 153 اور آندھراپردیش ارکان اسمبلی کی تعداد 175 سے بڑھا کر 225 کی جائے۔ اسمبلی حلقوں کی حدبندی آخری مرتبہ 2009ء میں کی گئی تھی۔ دستور کے تحت 2026ء تک کوئی نئی حدبندی نہیں کی جاسکتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT