Friday , April 28 2017
Home / Top Stories / اسمبلی چناؤ : یوپی میں 57 فیصد اور منی پور میں 84فیصد رائے دہی

اسمبلی چناؤ : یوپی میں 57 فیصد اور منی پور میں 84فیصد رائے دہی

یوپی کی 49 نشستوں میں مؤ سے مختار انصاری کا مقابلہ، منی پور چناؤ کے پہلے مرحلہ میں رائے دہندوں کا جوش و خروش
لکھنؤ ؍ امپھال 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش انتخابات کے چھٹے مرحلے میں 49 اسمبلی نشستوں کا احاطہ کرتے ہوئے آج ووٹ ڈالے گئے اور تقریباً 57.03 فیصد پولنگ ریکارڈ ہوئی۔ آج کی نشستوں میں مؤ بھی شامل ہے جہاں سے گینگسٹر سے سیاستداں بننے والے مختار انصاری انتخابی مقابلہ میں ہیں۔ یوپی چیف الیکٹورل آفیسر کے لکھنؤ میں واقع دفتر سے بتایا گیا ہے کہ آج کی پولنگ بڑی حد تک پرامن رہی اور تخمینی طور پر 57.03 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی گئی۔ 2012 ء کے ریاستی اسمبلی چناؤ میں ان 49 نشستوں پر پولنگ کا تناسب 55.04 فیصد تھا۔ آج منی پور اسمبلی کے پہلے مرحلہ میں بھی ووٹ ڈالے گئے جہاں 38 نشستوں کے لئے 84 فیصد کی ریکارڈ رائے دہی ہوئی۔ الیکشن کمیشن نے کہاکہ مختلف بوتھس کے باہر پولنگ کے آخر وقت تک ووٹروں کی طویل قطاریں دیکھی گئیں۔ او ایس ڈی برائے چیف الیکٹورل آفیسر منی پور کرم بونو سنگھ نے بتایا کہ گزشتہ دو انتخابات میں پولنگ کا تناسب لگ بھگ 80 فیصد تھا۔

اِس مرتبہ مزید اونچا تناسب ریکارڈ کیا گیا ہے۔ یوپی کے جاریہ ریاستی چناؤ کے پہلے مرحلہ میں پولنگ کا تناسب 64.22 فیصد رہا۔ دوسرے مرحلہ میں 65.16 فیصد، تیسرے مرحلہ میں 61.16 فیصد، چوتھے مرحلہ میں 60.37 فیصد اور پانچویں مرحلہ میں 57.37 فیصد ریکارڈ ہوا تھا۔ اِس طرح مرحلہ بہ مرحلہ پولنگ کے تناسب میں گراوٹ آئی ہے۔ تاہم 2012 ء کے چناؤ کے متعلقہ نشستوں کا جائزہ لیں تو پولنگ کے تناسب میں زیادہ فرق نہیں ہے۔ آج کے راؤنڈ میں لگ بھگ 1.72 کروڑ رائے دہندوں بشمول 94.60 لاکھ مرد اور 77.84 لاکھ خواتین ووٹ ڈالنے کے اہل تھے۔ جملہ 635 امیدوار انتخابی میدان میں ہیں، جن میں 63 خواتین شامل ہیں۔ اِس مرحلہ میں بی جے پی 45 نشستوں سے انتخاب لڑرہی ہے جبکہ اس کے حلیف اپنا دل کو ایک نشست دی گئی ہے۔ منی پور میں آج کے مرحلہ میں جملہ 168 امیدوار ہیں جن میں نمایاں اسپیکر لوکیشور سنگھ، وزراء ہیمو چندرا سنگھ ، گوند داس، رتنا کمار سنگھ، منی پور پی سی سی پریسڈنٹ ٹی این ہاؤکیپ شامل ہیں۔

اکھلیش ۔ راہول کا وارانسی میں مشترکہ روڈ شو
وارانسی 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر اترپردیش اکھلیش یادو اور نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کے آج یہاں مشترکہ روڈ شو کے دوران ایس پی اور بی جے پی ورکرس کے درمیان جھڑپ ہوگئی۔ یہ روڈ شو سہ پہر 3 بجے کچیری سے شروع ہوا جبکہ لگ بھگ اُسی وقت وزیراعظم نریندر مودی اپنے انتخابی حلقہ لوک سبھا میں طاقت کا مظاہرہ کررہے تھے۔ مودی نے اِس قدیم شہر کے مندروں میں پوجا بھی کی۔ اکھلیش اور راہول کا جلوس جب چوکا گھاٹ پہونچا تو ایس پی ورکرس کی قریب میں واقع میڈیا سنٹر میں بی جے پی والوں سے مڈبھیڑ ہوگئی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT