Tuesday , September 26 2017
Home / جرائم و حادثات / اسمعیل قتل کیس : بشمول دوخواتین ‘ آٹھ ملزمین گرفتار

اسمعیل قتل کیس : بشمول دوخواتین ‘ آٹھ ملزمین گرفتار

چاقو اور دیگر اشیاء ضبط‘ شفیع کی تفصیلات کے انکشاف سے پولیس کا گریز

حیدرآباد۔ 23۔ مئی  ( سیاست نیوز) ایسٹ زون پولیس نے گول ناکہ عنبر پیٹ کے ساکن 37 سالہ  محمد اسمعیل کے بے دردانہ قتل میں ملوث 8 ملزمین بشمول دو خواتین کو گرفتار کرلیا اور قتل میں استعمال ہوئے ہتھیار ، کار اور دیگر اشیاء برآمد کرلیا۔ پولیس نے اس کیس کے کلیدی ملزم 38 سالہ سید شفیع اللہ عرف شفیع ساکن سی ای کالونی عنبر پیٹ جو مقامی جماعت سے وابستہ ہے، سے متعلق تفصیلات افشاء کرنے سے گریز کیا۔ ڈپٹی کمشنر پولیس ایسٹ زون ڈاکٹر وی رویندر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ سید شفیع اللہ نے اس کیس کی ملزمہ 43 سالہ فریدہ بیگم سے کچھ عرصہ کیلئے تعلقات قائم کئے تھے اور بعد ازاں سال 2007 ء میں اس سے شادی کرلی اور اپنی پہلی بیوی ، ماں اور بھائی کو  صیغہ راز میں رکھا۔ فریدہ بیگم کو اس کے پہلے شوہر سے ایک بیٹی 25 سالہ ثمینہ بیگم بھی ہے اور اس لڑکی کا پرانے شہر کے ایک شخص سے مبینہ طور پر معشوقہ تھا جس میں سید شفیع اللہ نے ثمینہ بیگم کو اس شخص سے علحدہ کردیا تھا۔ مقتول محمد اسمعیل جو شفیع اللہ کا حامی تھا ، کی شادی ثمینہ بیگم سے ہوئی۔ شادی کے بعد اسمعیل اور ثمینہ کو ایک لڑکی پیدا ہوئی تھی۔

 

لیکن کچھ ماہ بعد میاں بیوی میں اختلافات پیدا ہوگئیں۔ مقتول اسمعیل نے اپنی ازدواجی زندگی میں شفیع اللہ کی جانب سے دراڑ پیدا کرنے کے شبہ میں اسے جاریہ سال منعقدہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں کھلے عام دھمکایا اور اس گریبان بھی پکڑلیا۔ عنبر پیٹ پولیس نے ملزم کی سیاسی وابستگی کو میڈیا کے روبرو پیش کرنے سے گریز کیا اور پھر ایک مرتبہ مقامی جماعت کی ساکھ کو  بچانے کی کوشش کی۔   اسمعیل نے شفیع اللہ کی دوسری شادی کے راز کو اس کے بھائی ، بیوی اور ماں کے روبرو پردہ فاش کردیا جس کے سبب شفیع اللہ نے اسمعیل سے انتقام لینے کا فیصلہ کرلیا۔ شفیع اور اسمعیل کے درمیان مفاہمت کیلئے اس کے دوست ناصر کو طلب کیا گیا اور 13 مئی کو ناصر نے مسئلہ کی یکسوئی کیلئے اس کے مکان کے قریب طلب کیا۔ شفیع اللہ نے اسمعیل کے وہاں پہنچتے ہی اپنے ایک ساتھی 39 سالہ شیخ حمید پاشاہ کی مدد سے چاقو سے حملہ کر کے اس کا قتل کردیا اور بعد ازاں محمد عارف ، سید عابد اور سید مخدوم کی مدد سے نعش کو ٹھکانے لگانے کیلئے Wagon R کار میں ضلع محبوب نگر روانہ کیا جہاں پر ملزمین نے بھوت پور منڈل تاٹی پرتی ولیج میں مقتول کی نعش کو پٹرول چھڑک کر نذرآتش کردیا۔ عنبر پیٹ پولیس نے گرفتار ملزمین کے ہمراہ سید اسمعیل کی جھلسی ہوئی نعش کو حیدرآباد منتقل کیا اور یہاں پر فانسک ماہرین کی مدد سے پوسٹ مارٹم کیا گیا تھا۔ ڈی سی پی ڈاکٹر رویندر نے بتایا کہ اسمعیل کے قتل کیلئے اکسانے کے الزام میں شفیع اللہ کی دوسری بیوی فریدہ بیگم اور بیٹی ثمینہ بیگم کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ عنبر پیٹ پولیس اسپیشل ٹیم نے ملزم شفیع اللہ کے قبضہ سے قتل میں استعمال ہوئے چاقو، مقتول کا موبائیل فون ، کار اور دیگر اشیاء برآمد کرلیا۔

 

TOPPOPULARRECENT