Tuesday , July 25 2017
Home / دنیا / اسٹیو بینن قومی سیکورٹی کونسل سے برطرف

اسٹیو بینن قومی سیکورٹی کونسل سے برطرف

واشنگٹن، 6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے سیاسی حکمت عملی کے سربراہ اسٹیو بینن کو قومی سیکورٹی کونسل سے ہٹا دیا ہے ۔وہائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری ایک بیان میں مسٹر بینن کو ہٹائے جانے کی توثیق کی گئی ہے ۔کچھ قانون ساز اور دوسرے حضرات نے ، جو برسوں سے امریکی خارجہ پالیسی کے شعبے میں فیصلے کیا کرتے تھے ، کہا تھا کہ یہ بات مناسب نہیں کہ بینن اس طرح کام انجام دیں جس سے سیاسی الزام تراشی کو شہ ملتی ہو، جو قومی دارلحکومت کی روایات کے بگاڑ کا سبب بنے گی۔ وہ وائٹ ہاؤس کے اعلیٰ ترین عہدے پر فائز تھے ، جو پینل قومی سلامتی کے لیے باعثِ تشویش معاملات زیر غور لاتا ہے ۔گذشتہ سال، ٹرمپ کی صدارتی مہم میں شمولیت سے پہلے ، بینن ‘برائٹ بارٹ نیوز’ کے بانی تھے ، جو دائیں بازو کی خبریں، آزاد رائے اور بیان بازی کی ویب سائٹ ہے ، جسے اُنھوں نے ”قدامت پسند دائیں بازو کا ایک پلیٹ فارم فراہم کیا تھا”۔ٹرمپ کے ہدایت نامے میں دو دیگر کلیدی اہل کاروں کو سکیورٹی کونسل کے گروپ کی اہم قیادت کے لیے بحال کر دیا ہے ۔ وہ ہیں نیشنل انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر ڈین کوٹس اور چیرمین جوائنٹ چیفس، میرین کور جنرل جوزف ڈنفرڈ۔ ساتھ ہی، صدر نے اپنے ہوم لینڈ سکیورٹی مشیر، ٹام بوزرٹ کے عہدے کا درجہ گھٹا دیا ہے ۔ٹرمپ کے نیشنل سکیورٹی مشیر، آرمی جنرل ایچ آر مک ماسٹر کو ذمہ داری دی گئی ہے کہ وہ کونسل کے اجلاسوں کا ایجنڈا طے کریں۔

 

امریکی اتحادی فوج داعش کو تباہ
و برباد کرے گی:ٹرمپ
واشنگٹن، 6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ امریکی اتحادی فوج دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ (داعش ) کو تباہ کرکے تہذیب و تمدن کی حفاظت کرے گی۔مسٹر ٹرمپ نے اردن کے شاہ عبداللہ کے ساتھ وائٹ ہاؤس میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کل کہا کہ داعش کو تباہ و بربادکردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا ”شاہ عبداللہ دولت اسلامیہ کے خلاف جنگ لڑنے اور اس کو شکست دینے والے ایک رہنما کے طور پر جانے جاتے ہیں”۔ واضح رہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے داعش کو پہلے ہی ختم کرنے کا منصوبہ بنارکھا ہے ۔اس بابت امریکی وزیر دفاع جم میٹس پینٹاگون کی ابتدائی رپورٹ وہائٹ  ہاؤس کو سونپ چکے ہیں۔
صدر ازبکستان نے پیٹرسبرگ
حملے کی مذمت کی
ماسکو، 6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ازبکستان کے صدر شوکت مرزائیف نے روس کے سینٹ پیٹرس برگ میں ہوئے بم حملے کی مذمت کرتے ہوئے خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔مسٹر مرزائیف نے کل روس کے صدر بلادمیر پوتن سے ملاقات کے دوران روس کو سیکورٹی سے متعلق ہرممکن مدد دینے کا وعدہ کیا ہے ۔ انہوں نے افغانستان میں روس کو مکمل حمایت دینے کا بھی وعدہ کیا۔واضح رہے کہ سینٹ پیٹرس برگ میں پیر کو میٹرو میں ہوئے دھماکہ میں 14 افراد ہلاک اور تقریباً 50 زخمی ہوگئے تھے ۔ یہ دھماکہ دو اسٹیشنوں سنایا پلوشیڈ اور ٹیکنالوجسکی انسٹی ٹیوٹ کے مابین ہوئے تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT