Thursday , May 25 2017
Home / شہر کی خبریں / اسکولس کو اچانک تعطیلات پر خانگی اسکول انتظامیہ کی برہمی

اسکولس کو اچانک تعطیلات پر خانگی اسکول انتظامیہ کی برہمی

حکومت کا عمل غیر منصوبہ بند ، کئی اسکولس سالانہ امتحانات اور نتائج سے قاصر
حیدرآباد۔19اپریل (سیاست نیوز) اسکولوں کو اچانک تعطیلات کے اعلان پر خانگی اسکولوں کے ذمہ داروں میں برہمی پائی جاتی ہے۔ حکومت کی جانب سے اچانک تعطیلات کے اعلان کو خانگی اسکولوں نے تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اس عمل کو غیر منصوبہ بند عمل سے تعبیر کیا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ تعطیلات کا جو اعلان کیا گیا ہے اس کے احکام موصول ہونے تک بیشتر اسکول چھوڑے جا چکے تھے اسی لئے کئی اسکول انتظامیہ جو تعطیلات کے دوران انجام دینے والے کام طلبہ کے حوالے کیا کرتے تھے وہ ایسا نہیں کرپائے ۔ محکمہ تعلیم کی جانب سے جاری کردہ احکامات 12بجے دن کے بعد ہی گشت کرنے لگے لیکن اس کی تصدیق ہوتے ہوئے ایک گھنٹہ سے زیادہ کا وقت گذر گیا اور بیشتر اسکولوں میں طلبہ کی چھٹی ہو چکی تھی۔ ریاست تلنگانہ میں محکمہ تعلیم کی جانب سے کئے گئے اس اقدام کو خانگی اسکول انتظامیہ ضروری قرار دے رہے ہیں لیکن یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ ان احکامات کو کم از کم ایک دن کی مہلت فراہم کرتے ہوئے جاری کیا جاتا تو اسکول انتظامیہ کی جانب سے تمام امور مکمل کرلئے جاتے اور طلبہ کو تعطیلات کے دوران کئے جانے کے کام حوالے کردیئے جاتے لیکن اتنی مہلت بھی دستیاب نہیں ہوئی بلکہ کئی اسکولوں کے انتظامیہ کی جانب سے  20اپریل سے تعطیلات کی اطلاع بذریعہ ایس ایم ایس روانہ کی گئی کیونکہ جب تک احکام موصول ہوئے تھے اس وقت تک طلبہ اسکول سے جا چکے تھے۔ خانگی اسکولوں کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ اسکولوں میں اچانک تعطیلات کے احکام کی اجرائی اور سختی سے ان پر عمل آوری کو یقینی بنانے کے اقدامات تو کئے جا رہے ہیں لیکن محکمہ تعلیم کی جانب سے ان اسکولوں کو نظر انداز کیا جانے لگا ہے جو اسکول کارپوریٹ اسکولوں میں شمار کئے جاتے ہیں کیونکہ شہر میں ایسے کئی اسکول موجود ہیں جو اب تک محکمہ تعلیم کے احکامات کے مطابق سالانہ امتحانات کی تکمیل نہیں کئے ہیں اورکئی اسکولوں میں سالانہ امتحانات کا عمل بھی جاری ہے۔خانگی اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے جاری کردہ احکامات طلبہ کے تحفظ اور ان کے مفاد میں ہیں لیکن اگر اس بات کا فیصلہ 24گھنٹے قبل کیا جاتا تو شائد طلبہ کی چھٹیوں میں انہیں تفویض کیاجانے والا کام ان کے حوالہ کردیا جاتا اب کیونکہ طلبہ کو نتائج بھی حوالہ کرنا نہیں ہے اسی لئے یہ بھی نہیں کہا جا سکتا کہ چند یوم بعد جب طلبہ اسکول پہنچیں گے تو انہیں تعطیلات کا کام حوالہ کردیا جائے گا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT