Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / اسکول بس اور ٹرین میں خوفناک تصادم

اسکول بس اور ٹرین میں خوفناک تصادم

اترپردیش میں المناک حادثہ ، 8 طلباء ہلاک اور 14 زخمی
جدوئی ( اترپردیش ) ۔ 25 ۔ جولائی : (سیاست ڈاٹ کام ) : ایک المناک حادثہ میں 8 بچے ہلاک اور دیگر 14 زخمی ہوگئے ۔ جب کہ بغیر چوکیدار والے ریلوے کراسنگ پر آج صبح ایک اسکول کی منی بس ، ایک ٹرین سے ٹکرا گئی ۔ یہ حادثہ بس ڈرائیور کی لاپرواہی اور وارننگ کو نظر انداز کردینے کی وجہ سے پیش آیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ غوثیہ ٹاون شپ میں واقع ٹنڈرہاٹ اسکول کی بس جس میں 6 تا 14 سال کی عمر کے طلباء سوار تھے کٹکا ۔ مدھو سنگھ ریلوے اسٹیشن کے درمیان واقع گیٹ نمبر 6 پر وارنسی ۔ الہ آباد جانے والی پاسنجر سے ٹکرا گئی۔ تصادم کی شدت سے یہ بس ، قریب میں واقع کھیت میں جاگری ۔ اگرچیکہ حادثہ کے وقت ’ گیٹ مترا ‘ دستیاب تھا جس کے اشارہ کو ڈرائیور نے نظر انداز کردیا ۔ وزیر ریلوے سریش پربھو نے اس حادثہ میں تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے یہ اطلاع دی ۔ بتایا جاتا ہے کہ گیٹ مترا نے ایک سرخ پرچم دکھاتے ہوئے ڈرائیور کو اشارہ کیا کہ ٹرین آرہی ہے لیکن ڈرائیور اس وقت کانوں میں ایر فون لگایا ہوا تھا ۔ جس کے باعث اس وارننگ کو دیکھ نہیں سکا ۔ ڈرائیور اور دیگر 7 بچوں کو زخمی حالت میں مختلف ہاسپٹل میں شریک کروادیا گیا ہے ۔ جب کہ شدید زخمیوں کو تشویشناک حالت میں BHU ہاسپٹل وارنسی سے رجوع کردیا گیا ۔ دریں اثناء پولیس سپرنٹنڈنٹ ارویند بھوشن پانڈے نے بتایا کہ اسکول مینجمنٹ کے خلاف ایف آئی آر درج کرلیا گیا ۔ جب کہ مہلوک طلباء کی شناخت کرلی گئی ۔ چیف منسٹر اکھلیش یادو نے مہلوکین کے خاندان کے لیے فی کس 2 لاکھ روپئے ایکس گریشیا اور زخمیوں کے لیے مفت علاج کا اعلان کیا ہے ۔ جب کہ وزیر ریلوے نے بھی مہلوکین کے لواحقین کے لیے 2 لاکھ ایکس گریشیا ، شدید زخمیوں کے لیے ایک لاکھ روپئے اور معمولی زخمیوں کے لیے 20 ہزار روپئے کی امداد کا اعلان کیا ہے ۔ واضح رہے کہ ایسے ریلوے گیٹس جہاں پر حادثہ کا جوکھم رہتا ہے وہاں پر 4000 گیٹ مترا متعین کیے گئے ہیں تاکہ مسافرین کی سلامتی اور حادثات کی روک تھام کو یقینی بنایا جاسکے ۔ ملک گیر سطح پر 4,188 گیٹ متراؤں کا تقرر کیا گیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT