Thursday , August 17 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اعلی تعلیم کے حصول کا زریں موقع، آئی آئی ٹی کی مفت کوچنگ

اعلی تعلیم کے حصول کا زریں موقع، آئی آئی ٹی کی مفت کوچنگ

31 جنوری کو ایم ایس رحمانی 30 کے ٹسٹ، 29 جنوری تک ادخال درخواست کی سہولت
عادل آباد /24 جنوری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ایم ایس رحمانی 30 اسکریننگ ٹسٹ ضلع عادل آباد کے علاوہ دیگر اضلاع میں بھی منعقد کئے جا رہے ہیں۔ یہ بات اسٹیٹ کوآرڈینیٹر جناب شفیع اللہ خاں نے بتائی۔ انھوں نے دسویں جماعت اور انٹر میڈیٹ سال اول میں تعلیم حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات سے شرکت کی خواہش کی اور بتایا کہ 31 جنوری کو منعقد ہونے والے ایم ایس اور رحمانی 30 اسکریننگ ٹسٹ کے لئے جاریہ ماہ کی 29 تاریخ تک درخواستیں داخل کی جاسکتی ہیں۔ کیمسٹری، فزکس، میتھس اور لاجیکل ریزننگ مضامین سے تعلق رکھنے والے سوالات پر اسکریننگ ٹسٹ لیا جائے گا۔ مستقر عادل آباد میں لٹل فلاور ہائی اسکول شانتی نگر، نرمل میں حرا ماڈل اسکول مغلپورہ، بودھن میں کریسنٹ ہائی اسکول انگلش میڈیم میں امتحانات کا انعقاد عمل میں لایا جا رہا ہے، جس کے لئے عادل آباد ٹاؤن کوآرڈینیٹر محمد محسن سے 9059663290، نرمل میں عبد الخالد سے 7396296285، بودھن میں میر جاوید علی سے 9848575534 پر ربط پیدا کیا جاسکتا ہے۔ علاوہ ازیں ضلع عادل آباد کوآرڈینیٹر مسٹر انتخاب عالم سے 9392020497 اور اسٹیٹ کوآرڈینیٹر جناب شفیع اللہ خاں سے 9440062685 پر تفصیلات حاصل کی جاسکتی ہیں۔ رحمانی 30 اور ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی کے تحت 9 واں سکریننگ ٹسٹ کا انعقاد عمل میں لایا جا رہا ہے۔ اسکریننگ ٹسٹ میں کامیابی حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات کو حیدرآباد میں دو سال مفت انٹر میڈیٹ تعلیم کے علاوہ مفت آئی آئی ٹی کی کوچنگ دی جائے گی، جب کہ رہائش اور طعام کی مفت سہولت کے علاوہ معاشی اعتبار سے کمزور طلبہ و طالبات کو مہانہ ایک ہزار روپئے وظیفہ بھی دیا جائے گا۔ مسلمانوں کی تعلیمی پسماندگی کو محسوس کرتے ہوئے دیگر طبقات کے طرز پر مسلم طلبہ کے مستقبل کو درخشاں بنانے کی غرض سے مولانا ولی رحمانی (پٹنہ) نے رحمانی 30 کے نام پر اس تحریک کا آغاز کیا، جس سے ہر سال مسلم طلبہ کو خاطر خواہ فائدہ ہو رہا ہے۔ اس تحریک سے متاثر ہوکر ایم ایس ایجوکیشن اکیڈمی حیدرآباد نے رحمانی 30 سے اشتراک کیا، جس کی بناء پر ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے مختلف اضلاع میں اسکریننگ ٹسٹ کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ مسٹر شفیع اللہ خاں نے بتایا کہ خانگی ادارے آئی آئی ٹی کی خاطر پانچ لاکھ روپئے ڈونیشن حاصل کر رہے ہیں، جو عام زندگی گزارنے والوں کے لئے کافی دشوار ثابت ہوتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ پیشہ ورانہ کورسس میں مسلم طلبہ کی تعداد صرف 3 فیصد ہے، تاہم آئی آئی ٹی کے ذریعہ ملازمتوں میں مواقع فراہم ہوسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT