Tuesday , March 28 2017
Home / شہر کی خبریں / اعمال و سنتیں ہی اُخروی زندگی میں کامیابی کی ضمانت

اعمال و سنتیں ہی اُخروی زندگی میں کامیابی کی ضمانت

دعوت اسلامی کے سہ روزہ اجتماع کا اختتام، پہاڑی شریف میں ذکر سے وجد کی کیفیت، علماء کرام کا خطاب
حیدرآباد۔12مارچ (سیاست نیوز) اللہ کے رسولﷺ کی سنتوں پر عمل اور انہیں اپنی زندگیوں میں شامل کرنا ہی ایمان کی علامت ہے اور یہ اعمال و سنتیں ہی اخروی زندگی میں کامیابی کی ضمانت ہے۔ دعوت اسلامی کے سہ روزہ اجتماع کے آخری یوم پہاڑی شریف درگاہ حضرت بابا شرف الدین سہروردی ؒ کے دامن میں وسیع و عریض اجتماع گاہ اللہ کے ذکر سے گونج گئی اور طویل ذکر نے اطراف و اکناف کے ماحول میں وجد کی کیفیت پیدا کردی۔ دعوت اسلامی سے تعلق رکھنے والے مختلف علماء و اکابرین نے اس عظیم الشان اجتماع سے خطاب کے دوران امت مسلمہ کو تلقین کی کہ وہ اللہ کے رسولﷺ کی سنتوں کو اپنی زندگی میں شامل کرلیں تاکہ انہیں بروز محشر کسی پشیمانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ اسی طرح خواتین کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ بھی اپنی زندگیوں کو اسلام کے مطابق گذارنے کا فیصلہ کرتے ہوئے پورے کے پورے دین میں داخل ہوجائیں اور ایک مثالی مسلم خاتون بننے کی کوشش کریں۔ اجتماع کے آخری دن آج اطراف و اکنا ف کے علاقوں میں عوام کا کافی اژدہام دیکھا گیا اور لوگ جوق در جوق اجتماعی دعاء میں شرکت کیلئے پہنچ رہے تھے۔ تنظیم دعوت اسلامی کے سہ روزہ اجتماع کے آخری دن ذکر کی محفل اور اجتماعی دعاء اور صلواۃ و سلام بحضور خیرالانام ﷺ میں بھی لاکھوں عوام موجود تھے۔اجتماعی دعاء کے دوران عالم اسلام‘ ہندستان اور ریاست کے مسلمانو ںکے لئے خصوصی دعائیں کی گئیں اور دنیا بھر میں قیام امن کے علاوہ اسلام کی سربلندی کے لئے دعاء کی گئی۔ اجتماع سے آج دن میں مولانا محمد شاہد عطاری نے انگریزی میں خطاب کے دوران دعوت اسلامی کی سرگرمیو ںاور خدمات کے متعلق تفصیلات سے واقف کروایا۔ مولانا سید عارف باپو نے اپنے اثر انگیز خطاب کے دوران اسلام میں خواتین کے مقام و مرتبہ سے واقف کرواتے ہوئے ان کے حقوق اور خواتین کے ساتھ سلوک کے علاوہ خواتین کی ذمہ داریوں کے متعلق تفصیلات بیان کرتے ہوئے کہا کہ اسلام نے کسی گوشہ یا شعبہ میں خواتین کو ترقی سے روکا نہیں ہے بلکہ شریعت کے دائرہ میںر ہتے ہوئے قرآ ن و حدیث کے احکام کے مطابق زندگی گذارتے ہوئے خواتین اسلام بھی ہر شعبہ میں خدمات انجام دے سکتی ہیں۔انہوںنے خواتین کو مشورہ دیا کہ وہ اپنی زندگیوں کو دین و شریعت کے مطابق بنالیں تاکہ گھر جنت بن جائیں ۔ مولانا سید عارف باپو نے کہا کہ جن گھروں میں خواتین دین اسلام اور شریعت کے مطابق زندگی گذار تی ہیں وہ گھر ہر طرح کی دولت سے مالامال ہوتے ہیں اور جن زندگیوں سے دین نکلتا جاتا ہے اور سنتیں ترک ہونے لگتی ہے ان زندگیوں میں بے برکتی کا سرائیت کرجانا عجب نہیں ہے۔ مولانا حاجی عمران کھانی نے اس موقع پر اپنے خطاب کے دوران سنتوں پر عمل کے فضائل اور ان کی اہمیت کے متعلق واقف کرواتے ہوئے کہا کہ فرائض تو فرائض ہیں جن کا ترک کرنا کسی بھی صورت میں جائز نہیں ہے لیکن سنتوں پر عمل کرنا حب رسولﷺ کی علامت ہے اور نوجوانوں کو چاہئے کہ وہ سنتوں کے مطابق اپنی زندگی گزارنے کی کوشش کریں تاکہ انہیں دنیا و آخرت میں کامیابی حاصل ہو سکے۔ اجتماع کے آخری دن صدرنشین تلنگانہ ریاستی اقلیتی مالیاتی کارپوریشن جناب سید اکبر حسین ‘ جنا ب منیر قریشی اور دیگر موجود تھے ۔ اس موقع پر منتظمین نے حکومت ‘ محکمہ جات اور انتظامات میں حصہ لینے والوں سے اظہار تشکر کیا۔ مولانا شبیر عطاری وسید عارف باپو نے شرکاء کو ذکر و سلوک کروایا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT