Friday , April 28 2017
Home / ہندوستان / افراط زر قابو میں ، نوٹ بندی سے جی ڈی پی غیرمتاثر

افراط زر قابو میں ، نوٹ بندی سے جی ڈی پی غیرمتاثر

وزیراعظم نریندر مودی کی صنعتی اجلاس میں تقریر ، اوپل پلانٹ قوم کے نام معنون ، گجرات میں 8 شاہراہ بہتر

دہیج (گجرات)۔ 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہا کہ حکومت افراط زر پر قابو پانے میں کامیاب رہی ہے جو 2014ء سے پہلے بے قابو ہوگیا تھا اور کوئی بھی سیاسی پارٹی پانچ ریاستوں کے انتخابات کے دوران اس موضوع کو اٹھانے سے قاصر رہی۔ مودی نے کہا کہ اعلیٰ مالیاتی کرنسی نوٹوں کی تنسیخ کے بعد کئی جھوٹے الزامات عائد کئے گئے، افواہیں پھیلائی گئی کہ معیشت منتشر ہوجائے گی لیکن گزشتہ سہ ماہی کے جی ڈی پی اعداد و شمار سے ثابت ہوگیا کہ ملک تیز رفتار ترقی کے راستے پر ہے۔ وزیراعظم ایک صنعتی اجلاس سے خطاب کررہے تھے جس کا اہتمام او این جی سی پٹرول ایڈیشنس لمیٹیڈ کی عمارت میں منعقد کیا گیا تھا۔ ہم تمام جانتے ہیں کہ پورے ملک کو 2014ء کے انتخابات سے پہلے کونسے چیلنجس درپیش تھے۔ افراط زر بے قابو ہوگیا تھا۔ مودی نے کہا کہ آپ نے پانچ ریاستوں میں انتخابات کا مشاہدہ کیا ہے، تمام سیاسی پارٹیوں نے ہم پر ہر ممکن الزام عائد کیا لیکن پوری انتخابی مہم کے دوران ہم پر افراط زر کے سلسلے میں کوئی الزام عائد نہیں کیا گیا، کیونکہ کسی کو بھی اس پر یقین نہیں آسکتا تھا، لیکن ایسے زبردست انتخابات میں یہ ایک بڑی بات تھی تاہم کسی بھی حریف نے افراط زر کی بات نہیں کی۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ حکومت بے قابو افراط زر پر قابو پانے میں کامیاب رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ افراط زر کو قابو میں رکھنے کیلئے مزید اقدامات کئے جارہے ہیں۔  اپوزیشن قائدین پر مزید تنقید کرتے ہوئے اور ملک کی ترقی کا ثبوت دینے کیلئے وزیراعظم مودی نے گزشتہ سہ ماہی کے اعداد و شمار پیش کئے۔ بھروج سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیراعظم نریندر مودی نے آج گجرات میں 8 قومی شاہراہوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے 12,000 کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا تاکہ انفراسٹرکچر کی ترقی کی رفتار تیز کی جائے اور ریاست کے نوجوانوں کو ملازمتوں کے مواقع دستیاب ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان دنیا بھر کے ساتھ مسابقت کرنے کے قابل ہے۔ انہوں نے دہیج میں صنعتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اوپل پلانٹ ہندوستان کا سب سے بڑا پٹرو کیمیکل پلانٹ ہے جس میں 30 ہزار کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی گئی ہے۔ انہوں نے اس پلانٹ کو قوم کے نام معنون کرتے ہوئے کہا کہ اوسطاً فی کس پالیمر کا استعمال ہندوستان میں 10 کیلوگرام ہے جبکہ دنیا بھر کا اوسط 32 کیلوگرام ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT