Wednesday , October 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / افریقہ ۔ نیوزی لینڈ آج ونڈے سیریز کا دلچسپ اختتام متوقع

افریقہ ۔ نیوزی لینڈ آج ونڈے سیریز کا دلچسپ اختتام متوقع

ڈی ویلیرس اور ملر کا ناقص فام میزبان ٹیم کیلئے تشویش کاباعث

ڈربن ۔ 25 اگست ۔ ( سیاست ڈاٹ کام )نیوزی لینڈ اور جنوبی افریقہ کے درمیان رواں تین مقابلوں کی ونڈے سیریز کا آخری اور فیصلہ کن مقابلہ کل یہاں کنگس میڈ میں کھیلا جائیگا اور اُمید ہے کہ تین مقابلوں کی اس سیریز کا دلچسپ اختتام ہوگا کیونکہ ابتدائی مقابلے میں جنوبی افریقہ نے کامیابی حاصل کی تھی جبکہ دوسرے مقابلے میں جہاں نیوزی لینڈ کے بولروں نے بہترین بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے میزبان ٹیم کو 204 رنز تک محدود رکھا تھا وہیں نشانہ کے تعاقب مارٹن گپٹل نے 103 رنز اسکور کرتے ہوئے آٹھ وکٹوں کی کامیابی میں اہم رول ادا کیا تھا ۔ نیوزی لینڈ نے جنوبی افریقہ کے اس دورہ پر ٹوئنٹی 20 سیریز کے علاوہ ونڈے سیریز میں بھی بہترین مظاہرہ کیا ہے جیسا کہ پہلے مقابلے میں 304 رن کے نشانے کے تعاقب میں بھی مہمان ٹیم نے بہتر مظاہرہ کیا

جیسا کہ اُسے 20 رنز کی قریبی شکست برداشت کرنی پڑی تھی ۔ دوسرے مقابلے میں مارٹن گپٹل اور ان کے اوپنر ساتھی ٹام لیتھم نے پہلی وکٹ کیلئے 126 رنز بنائے تھے لہذا کارگذار کپتان کین ولیمسن اپنے اوپنرس سے کل کے فیصلہ کن مقابلے میں بھی اسی طرح کے مظاہرے کی اُمید کررہے ہیں ۔ جنوبی افریقہ کیلئے کپتان اے بی ڈی ویلیرس اور جارحانہ بیٹسمین ڈیوڈ ملر کا ناقص فام تشویش کا باعث ہے ، نیز فاف ڈوپلیسی کی عدم دستیابی بھی میزبان ٹیم کیلئے مسائل میں اضافہ ہے ۔ علاوہ ازیں بیٹنگ شعبہ میں جے پی ڈومنی کا شامل نہ ہونا بھی جنوبی افریقہ کیلئے پریشانی کا باعث ہے کیونکہ وہ مڈل آرڈر میں کلیدی کھلاڑی ہونے کے علاوہ مقابلے کے درمیانی اوورس میں اپنی اسپین بولنگ کے ذریعہ بھی ٹیم کی کامیابی میں اہم رول ادا کرتے ہیں۔ نیوزی لینڈ ٹیم کو بھی اپنے مستقل کپتان برینڈن مک کالم کے علاوہ راس ٹیلر کی خدمات بھی دستیاب نہیں ہے لیکن اس کے باوجود مہمان ٹیم نے ٹوئنٹی 20 کے علاوہ ونڈے سیریز میں بھی بہتر مظاہرہ کیا ہے ۔ نیوزی لینڈ ٹیم جس نے دورۂ جنوبی افریقہ کاآغاز پہلے ٹوئنٹی 20 مقابلے میں شکست کے ساتھ کیا لیکن دوسرے مقابلے میں جامع کامیابی کے ذریعہ اس نے سیریز کو برابر کیا ہے ۔

ونڈے سیریز کا بھی آغاز نیوزی لینڈ کیلئے یکساں رہا جیسا کہ پہلے مقابلے میں بہتر مظاہرہ کے باوجود اسے قریبی شکست برداشت کرنی پڑی تاہم دوسرے مقابلے میں جامع کامیابی کے ذریعہ وہ سیریز میں کامیابی کی سمت آگے بڑھ چکی ہے ۔ کل کے فیصلہ کن مقابلے میں جنوبی افریقہ کیلئے پھر ایک مرتبہ ہاشم آملہ کا مظاہرہ کلیدی ہوگا جوکہ ٹاپ آرڈر میں طویل اننگز کھیلنے کے علاوہ ٹیم کو ایک بہتر اسکور فراہم کرسکتے ہیں۔ آملہ کے بہتر مظاہرے سے مڈل آرڈر میں ڈی ویلیرس اور ملر کے علاوہ فرحان بہاردین کے لئے حالات بہتر ہوسکتے ہیںجیسا کہ بہاردین نے گزشتہ مقابلہ میں نصف سنچری اسکور کرتے ہوئے ٹیم کو مشکل حالات سے باہر نکالا ہے ۔ دونوں ٹیموں کے درمیان کھیلا جانے والا یہ ڈے نائیٹ مقابلہ ہندوستان میں شام 4:00 بجے سے دیکھا جاسکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT