Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / افسوس میرے شہر کی سڑکیں……

افسوس میرے شہر کی سڑکیں……

حیدرآباد میں بلدیہ کی لاپرواہی ،عوامی صحت کے لیے سنگین خطرہ
عالمی شہر بنانے حکومت کے بلند دعوے دھرے کے دھرے ، مرمت اور درستگی سے متعلق حکام کے بیانات ایک فریب
حیدرآباد /18 اکٹوبر ( سیاست نیوز ) شہر کی سڑکیں سنہرے تلنگانہ میں بدنما داغ کی شکل اختیار کرتی جارہی ہیں ۔ مسلسل بارش کے بعد تباہ شدہ سڑکوں کی مرمت میں بلدی حکام اور سرکاری مشنری مکمل طور پر ناکام نظر آرہی ہے ۔ جبکہ دوسری طرف بلدی حکام اور سرکاری نمائندوں کے بیانات بے بنیاد ثابت ہو رہے ہیں۔ شہر کی کسی بھی سڑک پر آرام دہ اور پرسکون سفر ممکن ہی نہیں ۔ چونکہ ہر سڑک اپنی خستہ حالی کے سبب ان بلدی حکام اور سرکار کی مبینہ لاپرواہی کا ثبوت پیش کر رہی ہیں ۔ خستہ حال سڑکوں کے سبب سفر کیلئے مجبور شہری یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ ’’ افسوس میرے شہر کی سڑکیں ‘‘ آخر کیا ہوگیا ہے ۔ میری شہر کی سڑکوں کو جو بہتر نہیں ہوتی ۔ شہر کی سڑکوں کو بہتر بنانے کے اقدامات میں بلدی حکام کی عدم دلچسپی عیاں ہوگئی ہے ۔ ہر طرف شہروں پر بڑے گھڈے خطرناک بنتے جارہے ہیں  ۔ بارش کے دوران سڑکوں پر پانی کا جمع ہونا اور بارش کے بعد سڑکوں پرکھڈے شہر کو مزید آلودہ بنادیا ہے ۔ سڑکوں کا گرد غبار ایک طرف سفر میں مشکلات تو دوسری طرف شہری صحت کیلئے مضر ثابت ہو رہا ہے ۔ ان دنوں شہر کی سڑکوں پر سفر انسانی صحت میں نئی بیماریوں کے اضافہ کا سبب بن رہا ہے اور مقررہ وقت پر اپنے مقام کو پہونچنا ہر شہری کیلئے  مشکل دہ امر ثابت ہوگیا ۔ شہریوں کی ایسی سنگین پریشانیوں میں قائدین کے بیرونی دورے تنقیدوں کا سبب بنے ہوئے ہیں ۔ ریاست کو ترقی دلانے اور مثالی ریاست بنانے کے اقدامات کو درست اقدام ہیں لیکن ریاست کی عوام کو پہونچائی جانے والی سہولیات میں دشواریاں کس حد تک درست ہیں ۔ شہری ان دنوں ایسے خیالات کا اظہار کر رہے ہیں ۔ شہر کی خستہ حال سڑکوں کی مرمت اور جنگی خطوط پر اقدامات کا بلدی حکام دعوی کر رہے ہیں اور اس سلسلہ میں آئے دن بیانات جاری کر رہے ہیں ۔ جبکہ عملی اقدامات میں شہریوں کی تکالیف بڑھتی ہی جارہی ہے ۔ بالخصوص نئے شہر پرانے شہر سکندرآباد ہائی ٹیک سٹی نیز شہر کا ہر وہ بلدی لاپرواہی کو چیخ چیخ کر بیان کر رہا ہے اور شہری یہ کہنے پر مجبور ہیں کہ ہائے میرے شہر کی سڑکوں کو کیا ہوگیا ہے ۔ بلدی حکام کو چاہئیے کہ وہ وہ بلند بانگ دعوؤں کو عملی جامہ پہنانے کیلئے موثر اور جنگی خطوط پر اقدامات کریں تاکہ شہریوں کو آسانی ہوا ور سنہرے تلنگانہ کا خواب شرمندہ تعبیر ہو۔

TOPPOPULARRECENT