Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / افغانستان کی تعمیر نو میں ہندوستان کے رول اور فوجی مدد کی ستائش

افغانستان کی تعمیر نو میں ہندوستان کے رول اور فوجی مدد کی ستائش

دہشت گرد گروپس سے نمٹنے کے لئے متحدہ پلیٹ فارم کی تجویز، امریکی کمانڈر نکولسن کی اجیت ڈوول اور دیگر سے ملاقات

نئی دہلی۔10 اگست (سیاست ڈاٹ کام) افغانستان نے ہندوستان سے زیادہ سے زیادہ فوجی کمک بشمول حملہ کرنے والے ہیلی کاپٹرس سربراہ کرنے کی خواہش کی ہے۔ امریکہ نے افغان سکیوریٹی فورسس کو ہندوستانی مدد کی حمایت کی ہے۔ امریکہ کے سرکردہ کمانڈر جو جنگ سے متاثرہ اس ملک میں امریکی کا رروائیوں کے نگران ہیں، ہندوستان کے اس موقف کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔ ہندوستان نے پہلے ہی افغانستان کو چار Mi-25ہیلی کاپٹرس فراہم کئے ہیں۔ امریکی کمانڈر جنرل جان نکولسن نے کہا کہ افغانستان کو طالبان اور دیگر کئی دہشت گرد تنظیموں سے نمٹنے کے لئے مزید فوجی طیاروں کی ضرورت ہے۔ افغانستان میں امن و استحکام کی بحالی کے لئے ہندوستان کے گراں قدر رول کا خیرمقدم کرتے ہوئے نکولسن نے کہا کہ دہشت گرد تنظیمیں جیسے حقانی نیٹ ورک، لشکر طیبہ اور جیش محمد نہ صرف افغانستان بلکہ سارے علاقے بشمول ہندوستان کے لئے خطرہ ہیں۔ نکولسن اس وقت افغانستان میں امریکی فوجی کارروائیوں کے سربراہ ہیں۔ وہ دوسری مرتبہ ہندوستان کا دورہ کررہے ہیں جہاں انہوں نے قومی سلامتی مشیر اجیت ڈوول، معتمد خارجہ ایس جئے شنکر اور معتمد دفاع جی موہن کمار سے ملاقات کی۔

انہوں نے مختلف موضوعات بشمول افغانستان میں صورتحال اور علاقے کو دہشت گردی کے خطرات پر تبادلہ خیال کیا۔ امریکی کمانڈر نے کہا کہ ہزاروں افغان سکیوریٹی جوانوں کو ہندوستان کی فوجی تربیت سے کافی مدد ملی ہے اور یہ کوشش ناٹو اور امریکہ کی خواہش کے عین مطابق ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ حکومت افغانستان کے بارے میں تبصرہ نہیں کرسکتے لیکن انہیں پتہ ہے کہ حکومت نے زیادہ سے زیادہ فوجی مدد کی خواہش کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ مزید جنگی طیاروں کی ضرورت ہے تاکہ انہیں لڑائی میں فوری استعمال کیا جاسکے۔ انہوں نے بتایا کہ افغانستان کو روسی طیاروں کے فاضل پرزوں کے حصول میں مشکلات پیش آرہی ہیں کیوں کہ ماسکو کے خلاف مغربی تحدیدات عائد ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان یہ فاضل پرزے افغانستان کو سربراہ کرسکتا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ امریکہ کی جانب سے افغانستان کو ہندوستان کی فوجی مدد کی حمایت کی جائے گی۔ پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ طالبان کو پاکستان میں محفوظ پناہ گاہیں فراہم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ نے اسلام آباد سے کہا ہے کہ اس کی سرزمین پر موجود دہشت گرد نیٹ ورکس سے نمٹنے کے لئے اقدامات کرے ۔

انہوں نے کہا کہ ہم ہمیشہ دہشت گرد گروپس کے خلاف کارروائی کے لئے پاکستان کی حوصلہ افزائی کرتے آئے ہیں۔ نکولسن نے صحافیوں کے گروپ سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد گروپس کی صلاحیتوں کو کم کرنے کے لئے اسلام آباد کی جاری کوششوں کی بھی امریکہ تائید کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ یہ کوشش کررہا ہے کہ انسداد دہشت گردی پلیٹ فارم تیار کیا جائے جہاں تمام دہشت گرد گروپس سے نمٹنے پر توجہ مرکوز کی جائے ۔ یہ گروپس سارے علاقے کے لئے خطرہ ہیں اور ان سے نمٹتے ہوئے امن و استحکام کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے افغانستان کی تعمیر نو میں ہندوستان کے رول کی ستائش کی اور کہا کہ صوبہ ہیرات میں افغان۔ہند فرینڈشپ ڈیم اور چھابر بندرگاہی پراجیکٹ سے افغانستان کی معیشت کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ امریکی کمانڈر کل ان کے آبائی رکن خاندان بریگیڈیر جنرل جان نکولسن کی قدیم دہلی میں واقع قبر پر گئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ اور ان کے اہلیہ نے یہاں قبر کی صفائی انجام دی۔

TOPPOPULARRECENT