Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / افغانستان کی مزید دفاعی اعانت سے ہندوستان کا اتفاق

افغانستان کی مزید دفاعی اعانت سے ہندوستان کا اتفاق

پاکستان کی طرف سے اُبھرنے والی دہشت گردی کی سرکوبی سے دونوں ملکوں کا اتفاق ، چار معاہدوں پر دستخط، سشما اور ربانی کی پریس کانفرنس
نئی دہلی 11 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے آج افغانستان کو اُس کی سکیورٹی فورسیس کو مضبوط بنانے کے لئے مزید اعانت کی فراہمی سے اتفاق کرلیا جبکہ کلیدی نوعیت کے دونوں پارٹنرس نے سکیورٹی تعاون میں گہرائی لانے کا فیصلہ کیا اور پاکستان سے سرحد پار دہشت گردی کے چیلنج سے نمٹنے کے لئے قریبی ارتباط کے ساتھ کام کرنے کا عزم کیا ہے۔ وزیر اُمور خارجہ سشما سوراج نے اپنے افغان ہم منصب صلاح الدین ربانی کے ساتھ وسیع تر موضوعات پر بات چیت منعقد کرنے کے بعد 116 نئے ترقیاتی پراجکٹس پر افغانستان کے 31 صوبوں میں مشترکہ طور پر عمل آوری کی جائے گی۔ سشما نے ربانی کے ساتھ مشترکہ میڈیا بریفنگ میں کہاکہ ہم ہمارے دونوں ملکوں کو سرحد پار دہشت گردی اور محفوظ پناہ گاہوں و دیگر نیٹ ورک سے درپیش چیلنجوں پر قابو پانے کے معاملہ میں بدستور متحد ہیں۔ افغانستان کو گزشتہ چند ماہ کے دوران دہشت گردانہ حملوں کی لہر کا سامنا رہا ہے اور مجوزہ مصالحتی اور امن مساعی میں پیشرفت ہنوز باقی ہے۔ افغانستان کے ساتھ اپنے رشتے کوہندوستان کے لئے بھروسے کا معاملہ بتاتے ہوئے سشما نے کہاکہ نئی دہلی افغان عوام کے ساتھ کام کرتا رہے گا اور محفوظ ، مستحکم، پرامن، خوشحال، متحدہ اور تمام طبقات کی ترقی پر مبنی افغانستان کی تعمیر کے لئے اُن کی کوششوں میں تعاون کرے گا۔ دونوں ملکوں نے چار معاہدوں پر دستخط بھی کئے جن میں گاڑیوں کی آمد و رفت سے متعلق ایک معاہدہ شامل ہے۔ سشما نے کہاکہ ہم افغانستان کے دستور کے چوکھٹے کے اندرون نیز تشدد سے پاک ماحول میں قومی امن اور مصالحتی کوششوں کی بھرپور تائید کرتے ہیں۔ اُنھوں نے اعادہ کیاکہ ہندوستان افغان عوام کو اُن کے خوابوں کی تکمیل میں مدد و تعاون جاری رکھے گا۔ سشما سوراج اور صلاح الدین ربانی دونوں نے پاکستان کی طرف سے اُبھرنے والی دہشت گردی کے تعلق سے اپنے بیانات میں واضح اصطلاحوں کا استعمال کیا حالانکہ اُنھوں نے اس ملک کا نام نہیں لیا۔ افغانستان میں امن و استحکام کے لئے متواتر تائید و حمایت پر ہندوستان سے اظہار تشکر کرتے ہوئے ربانی نے کہاکہ دونوں ملکوں نے سکیورٹی تعاون کو مضبوط کرنے سے اتفاق کیا ہے۔ ہندوستان نے افغان نیشنل ڈیفنس فورسیس کے لئے اعانت فراہم کرنے سے بھی اتفاق کیا ہے۔ ہندوستان پہلے ہی افغانستان کی تعمیر نو میں گزشتہ 15 سال کے دوران دو بلین امریکی ڈالر مشغول کرچکا ہے لیکن ملٹری ساز و سامان کی
سربراہی میں محتاط رویہ اختیار کیا ہوا ہے۔ ہندوستان نے افغانستان کو چار ملٹری ہیلی کاپٹرس دیئے اور ابھی تک سینکڑوں افغان سکیورٹی پرسونل کو ٹریننگ دی ہے۔

TOPPOPULARRECENT