Friday , September 22 2017
Home / عرب دنیا / افغان طالبان اور فورسز میں شدید لڑائی

افغان طالبان اور فورسز میں شدید لڑائی

ہلمند ۔ 21 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) افغانستان کے صوبے ہلمند میں ضلع سنگین کے پولیس ہیڈکوارٹر پر قبضے کے لیے طالبان جنگجوؤں اور سکیورٹی فورسز کے درمیان شدید لڑائی جاری ہے۔ پولیس کمانڈر محمد داؤد نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ طالبان جنگجو ؤں نے محاصرہ کرلیا ہے۔ اور انھیں فوری طور پر کمک کی ضرورت ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ اگر مدد نہیں پہنچی تو وہ زیادہ دیر تک حملہ آوروں کو نہیں روک سکتے کیونکہ ان کے پاس گولہ بارود ختم ہو رہا ہے۔ دوسری جانب ہلمند کے گورنر نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ پورا ہلمند صوبہ طالبان کے قبضے میں جا سکتا ہے۔ کمانڈر داؤد نے مزید کہا کہ بازار بند ہیں۔ہم دو دنوں سے محصور ہیں۔ ہمارے اردگرد ہلاک شدگان اور زخمی لوگ پڑے ہیں۔ ہم نے دو دنوں سے کچھ نہیں کھایا ہے۔ اگر اگلے گھنٹے تک مدد نہیں پہنچتی ہے تو ہمارے فوجیوں کو زندہ پکڑ لیا جائے گا۔‘ انھوں نے کہا کہ پولیس ہیڈکوارٹر ہی ابھی ہمارے قبضے میں ہے اور ہمارے ساتھ نیشنل آرمی کے فوجی ہیں۔ ضلعی دفتر اور انٹلیجنس ڈائرکٹریٹ دشمنوں کے قبضے میں چلا گیا ہے۔‘ اس سے قبل ہلمند صوبے کے نائب گورنر نے فیس بک کے ذریعے ملک کے صدر اشرف غنی سے صوبہ ہلمند میں طالبان کے ساتھ جاری لڑائی میں مدد مانگی تھی۔ سماجی رابطوں کی سائٹ فیس بک پر محمد جان رسول یار نے صدر غنی کو اپنے پیغام میں لکھا کہ گذشتہ دو دنوں سے ہلمند میں ہونے والی لڑائی میں 90 فوجی مارے جا چکے ہیں۔ محمد جان نے صدر غنی کو متنبہ کیا تھا کہ صوبے پر طالبان کا قبضہ ہوسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT