Thursday , September 21 2017
Home / پاکستان / افغان طالبان کے دینی مدرسہ کو 30کروڑ روپئے پاکستانی امداد

افغان طالبان کے دینی مدرسہ کو 30کروڑ روپئے پاکستانی امداد

پشاور۔19جون ( سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان کے صوبہ خیبرپختونخواہ کی حکومت نے اپنے بجٹ میں 30 کروڑ روپئے رقم افغان طالبان کے دینی مدرسہ ’’ جامعہ جہاد‘‘ کیلئے مختص کی ہے ۔ اس مدرسہ کے سربراہ ملاعمر ہیں ۔ خیبرپختونخواہ کی اسمبلی میں وزیر شاہ فرمان نے اعلان کیا کہ انہیں فخر ہے کہ دارالعلوم حقانیہ نوشیرا کو اپنے اخراجات کی تکمیل کیلئے حکومت کی جانب سے 30کروڑ روپئے کی امداد دی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان زیرقیادت تحریک انصاف کی حکومت نے مذہبی اداروں کی امداد کے پروگرام کے تحت یہ رقم دیہات اکورا خٹک کے دینی مدرسہ کیلئے مختص کی ہے ۔ اس کے سابق طلبہ نے افغان طالبان کے کئی ارکان شامل ہیں ۔ جن میں افغان طالبان کے سربراہ ملا عمر بھی ہیں جنہوں نے اس دینی مدرسہ سے اعزازی ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT