Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / افغان پارلیمنٹ کے قریب دھماکے، 38 ہلاک

افغان پارلیمنٹ کے قریب دھماکے، 38 ہلاک

طالبان نے جڑواں دھماکوں کی ذمہ داری قبول کرلی
کابل ۔ 10 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) کابل میں افغانستان پارلیمنٹ کے قریب آج مصروف ترین اوقات کے دوران طالبان کے دو دھماکے ہوئے، جس کے نتیجہ میں کم سے کم 38 افراد ہلاک اور دیگر 45 زخمی ہوگئے۔ طالبان تخریب کاروں نے فوری طور پر ان بم حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی جو اس وقت ہوئے جب ملازمین اپنا کام ختم کرنے کے بعد پارلیمانی عمارت سے باہر نکل رہے تھے، پارلیمنٹ کے ایک زخمی سیکوریٹی گارڈ ذبیح نے کہا کہ ’’پہلا دھماکہ پارلیمنٹ کے باہر ہوا، جس میں کئی بے قصور ورکرس ہلاک اور زخمی ہوگئے۔ ایک خودکش بمبار جو پیدل چل رہا تھا یہ دھماکہ کیا۔ دوسرا دھماکہ کار بم کے ذریعہ کیا گیا جو سڑک کے دوسرے کنارے پر پارک کی گئی تھی‘‘۔ ایک سیکوریٹی عہدیدار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی خواہش کے ساتھ کہا کہ ’’دھماکہ میں 28 افراد ہلاک اور دیگر 45 زخمی ہوئے ہیں، جن میں پارلیمنٹ کے ملازمین اور دیگر عام شہری شامل ہیں‘‘۔ وزارت صحت کے ایک ترجمان نے کہا کہ تقریباً 70 افراد کو دواخانہ منتقل کیا گیا ہے۔ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ افغان انٹلیجنس کی گاڑی نشانہ بناتے ہوئے یہ دھماکہ کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT