Monday , July 24 2017
Home / شہر کی خبریں / اقامتی اسکولس میں تقررات کے اعلان کا خیرمقدم، مسلمانوں کو استفادہ کا مشورہ

اقامتی اسکولس میں تقررات کے اعلان کا خیرمقدم، مسلمانوں کو استفادہ کا مشورہ

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کا تاریخی کارنامہ، ٹی آر ایس ایم ایل سی محمد فاروق حسین کا بیان
حیدرآباد ۔ 11 فبروری (سیاست نیوز) ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل محمد فاروق حسین نے اقامتی اسکول میں 7 ہزار سے زائد جائیدادوں پر تقررات کا خیرمقدم کرتے ہوئے اس سے بھرپور استفادہ کرنے کا مسلمانوں کو مشورہ دیا۔ محمد فاروق حسین نے سرکاری اقامتی اسکولس کے قیام کی ستائش کی اقلیتوں کیلئے 200 اقامتی اسکولس منظور کرنے پر چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کی ستائش کرتے ہوئے اس کو تاریخی کارنامہ قرار دیا۔ ٹی آر ایس حکومت اقلیتوں کی تعلیمی، معاشی، سماجی پسماندگی کو دور کرنے کیلئے صرف وعدے نہیں کررہی ہے بلکہ عملی اقدامات کرتے ہوئے ایک نئی مثال قائم کررہی ہے۔ ریاست میں 71 اقلیتی اقامتی اسکولس قائم ہوگئے ہیں جہاں تجربہ کار تعلیمیافتہ اساتذہ کی خدمات سے استفادہ کرتے ہوئے اقلیتی طلبہ کے مستقبل کو روشن بنانے کیلئے دن رات محنت کی جارہی ہے۔ ہر ایک طالب علم پر سالانہ ایک لاکھ روپئے خرچ کرتے ہوئے قیام و طعام کے علاوہ دوسری تمام بنیادی سہولتیں فراہم کی جارہی ہے، جس کی ہندوستان کے کسی دوسری ریاست میں مثال نہیں ملتی۔ چیف منسٹر کے سی آر نے تمام طبقات کے اقامتی اسکولس میں 7000 سے زائد اساتذہ کا تقرر کرنے کا فیصلہ کیا ہے جن میں اقلیتی اقامتی اسکولس میں 2000 سے زائد تدریسی و غیرتدریسی جائیدادوں پر تقررات کئے جارہے ہیں۔ چیف منسٹر کی خصوصی دلچسپی سے تمام جائیدادوں کے تقررات میں اپنی قسمت آزمانے کیلئے اقلیتی امیدواروں کو حیدرآباد کے علاوہ اضلاع میں ماہرین تعلیم کی خدمات حاصل کرتے ہوئے خصوصی تربیت فراہم کی جارہی ہے۔ وہ تمام اقلیتی امیدواروں سے خواہش کرتے ہیں وہ تربیتی کلاسیس کا بھرپور فائدہ اٹھائے اور ماہرین تعلیم کی نگرانی میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے میں کوئی کسر باقی نہ رکھیں۔ ٹی آر ایس کے رکن قانون ساز کونسل محمد فاروق حسین نے اسلامک کلچرل سنٹر کیلئے 40 کروڑ روپئے منظور کرنے اور چیف منسٹر کی جانب سے پرگتی بھون میں اعلیٰ عہدیداروں کا جائزہ طلب کرتے ہوئے تعمیری ڈیزائن کا جائزہ لینے کا بھی خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ مختصر عرصہ میں بے شمار کام کرتے ہوئے چیف منسٹر تلنگانہ نے سماج کے تمام طبقات کا دل جیت لیا ہے۔ ریاست کی ترقی عوام کی فلاح و بہبود ٹی آر ایس حکومت کا نصب العین ہے۔ ریاست کے عوام ٹی آر ایس حکومت کی کارکردگی سے پوری طرح مطمئن ہیں۔ حکومت کی کارکردگی اور عوام کے اطمینان سے اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔ ان کے قدموں تلے زمین کھسک گئی ہے۔ اپنے وجود کو برقرار رکھنے کیلئے حکومت تلنگانہ اور چیف منسٹر کے ارکان خاندان کے خلاف من گھڑت بے بنیاد الزامات عائد کررہے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT