Thursday , May 25 2017
Home / شہر کی خبریں / اقامتی اسکولس میں تقررات کے لیے اعلامیہ کی اجرائی میں تاخیر

اقامتی اسکولس میں تقررات کے لیے اعلامیہ کی اجرائی میں تاخیر

امیدواروں میں بے چینی ، سی ای ڈی ایم سے طلبہ کو کوچنگ
حیدرآباد۔16 فبروری (سیاست نیوز) اقامتی اسکولوں کی 7 ہزار سے زائد جائیدادوں پر تقررات کے سلسلہ میں تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کی جانب سے اعلامیہ کی اجرائی میں تاخیر کے سبب طلبہ میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے۔ پبلک سرویس کمیشن نے گزشتہ ہفتے اعلامیہ جاری کرتے ہوئے 10 فبروری سے درخواستوں کے ادخال کی تاریخ مقرر کی تھی تاہم لمحہ آخر میں حکومت نے شرائط میں تبدیلی کا فیصلہ کیا جس کے بعد پبلک سرویس کمیشن نے اعلامیہ سے دستبرداری اختیار کرلی۔ 7306 جائیدادوں میں ٹیچنگ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کی جائیدادیں شامل تھیں جو ایس سی، ایس ٹی، بی سی اور اقلیتی اقامتی اسکولس پر مبنی تھیں۔ بے روزگار نوجوانوں کے احتجاج کے سبب حکومت نے اہلیت کی شرائط میں بعض ترمیمات کی ہیں۔ پی جی ٹی کے لیے 3 سال تجربے کی شرط کو حکومت نے ختم کردیا جبکہ گریجویشن میں 60 فیصد نشانات کی حد کو گھٹاکر 50 فیصد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت نے نئی ترمیمات کے سلسلہ میں پبلک سرویس کمیشن کو علیحدہ احکامات جاری نہیں کیئے جس کے بعد تازہ اعلامیہ کی اجرائی میں تاخیر ہورہی ہے۔ پبلک سرویس کمیشن کا ماننا ہے کہ امتحانات کا انعقاد ان کی ذمہ داری ہے جبکہ شرائط و ضوابط کو طے کرنا حکومت کا کام ہے۔ اسی دوران اقلیتی طلبہ کو پبلک سرویس کمیشن امتحانات کی کوچنگ کا فیصلہ کیا گیا۔ سی ای ڈی ایم کے ذریعہ ریاست کے 12 مراکز پر اقلیتی طلبہ کے لیے کوچنگ کا آغاز کردیا گیا۔ پبلک سرویس کمیشن کے اعلامیہ میں تاخیر کے سبب کم تعداد میں اقلیتی طلبہ کوچنگ میں حصہ لے رہے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ آن لائین درخواستیں داخل کرنے والے امیدواوں کی تعداد 2114 تھی جبکہ 616 طلبہ ہی کوچنگ میں شریک ہیں۔ کئی ایسے امیدواروں نے درخواستیں داخل کیں جو ٹیٹ کوالیفائی نہیں تھے۔ لہٰذا وہ کوچنگ میں شامل نہیں ہوئے۔ اساتذہ کے جائیدادوں پر تقررات کے سلسلہ میں ٹیٹ کوالیفائی ہونا ضروری ہے۔ اسی دوران ڈائرکٹر سی ای ڈی ایم پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ پبلک سرویس کمیشن کے تازہ اعلامیہ کے بعد طلبہ کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماہر فیکلٹیز کے ذریعہ کوچنگ کا اہتمام کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حیدرآباد کے نظام کالج سنٹر پر 142 اور خلوت میں 62 امیدوار کوچنگ میں شامل ہیں اس کے علاوہ عادل آباد 45، کریم نگر 94، کھمم 22، محبوب نگر 45، منچریال 10، نلگنڈہ 35، نظام آباد 48، سنگاریڈی 25، سدی پیٹ 33 اور ورنگل میں 55 امیدواروں کے ساتھ کوچنگ کا آغاز کیا گیا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT