Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اقامتی اسکولس میں داخلہ کیلئے ادخال درخواست کی کل آخری تاریخ

اقامتی اسکولس میں داخلہ کیلئے ادخال درخواست کی کل آخری تاریخ

23421 درخواستوں کی وصولی، چار ہزار غیراقلیتی امیدوار بھی شامل، 13 جون سے تعلیم کا آغاز

حیدرآباد۔/21مئی، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں اقلیتوں کیلئے قائم ہونے والے 71 اقامتی اسکولس میں داخلوں کیلئے23421 سے زائد درخواستیں آج شام تک آن لائن داخل کی گئیں۔ درخواستوں کے ادخال کی آخری تاریخ 23مئی مقرر کی گئی ہے۔ اقلیتی اداروں سے متعلق سوسائٹی کے نائب صدر نشین و ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو عبدالقیوم خاں اسکیم کی کامیابی کیلئے شبانہ روز محنت کررہے ہیں۔ وہ ایک طرف عہدیداروں سے مسلسل ربط میں ہیں تو دوسری طرف غیر سرکاری اداروں کے ساتھ بہتر تال میل کو برقرار رکھتے ہوئے آن لائن داخلوں میں اضافہ کو یقینی بنایا۔ حالیہ عرصہ میں ضلع نظام آباد میں آن لائن داخلوں کا رجحان انتہائی مایوس کن تھا۔ مقامی عہدیدار کو بارہا توجہ دہانی کے باوجود کوئی حوصلہ افزاء نتائج برآمد نہیں ہوئے جس پر نظام آباد کے ایکزیکیٹو ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن کو معطل کردیا گیا۔ اب جبکہ درخواستوں کے ادخال کیلئے مزید دو دن کی مہلت ہے توقع کی جارہی ہے کہ آن لائن درخواستوں کی تعداد 25000 تک پہنچ جائے گی۔ درخواستوں کی جانچ کا کام فوری طور پر شروع کیا جائیگا اور درخواستیں داخل کرنے والوں کی اہلیت کی جانچ ہوگی جس کی بنیاد پر ان کے داخلہ کو قطعیت دی جائے گی۔ اقلیتوں کیلئے قائم ہونے والے ان اقامتی اسکولس میں ابھی بھی اقلیتوں کی جانب سے حوصلہ افزاء ردعمل نہیں دیکھا گیا۔ 23421 درخواستوں میں مسلم اقلیت کی درخواستیں 9336 ہے جبکہ غیر اقلیت کے 13796 امیدواروں نے آن لائن درخواستیں داخل کیں۔ اس طرح 4000 غیر اقلیتی طلبہ نے اقلیتوں سے زیادہ درخواستیں داخل کی ہیں۔ دیگر اقلیتی طبقات میں بھی داخلے کا رجحان حوصلہ افزاء نہیں دیکھا گیا۔ پانچویں تا ساتویں جماعت کی کلاسیس کے ساتھ 13جون سے تعلیم کا آغاز کیا جائے گا۔ سوسائٹی نے باقاعدہ تقررات تک ریٹائرڈ پرنسپلس اور اساتذہ کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کیلئے تقررات کا عمل جاری ہے۔ مسلم اقلیت میں اعلیٰ طبقات کے 1442 امیدواروں نے درخواستیں داخل کیں جبکہ بی سی اے زمرہ میں 110، بی سی بی 865اور بی سی ای زمرہ میں 6919 آن لائن رجسٹریشن کرائے گئے ہیں۔ کرسچین اقلیت کے 271، سکھ 15، بدھسٹ 2 اور جین طبقہ کے ایک امیدوار نے درخواست داخل کی۔ غیر اقلیتی امیدواروں میں ایس سی 4990، ایس ٹی 2936، اعلیٰ طبقات 383 اور بی سی طبقہ کے 5487 امیدواروں نے درخواستیں داخل کیں۔ مجموعی طور پر 10 اضلاع میں محبوب نگر سرفہرست ہے جہاں 4298 آن لائن رجسٹریشن کرائے گئے۔ نلگنڈہ 3496کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔ نظام آباد 1229 رجسٹریشن کے ساتھ ابھی بھی آخری نمبر پر ہے۔ حیدرآباد میں 1416، رنگاریڈی 1663، میدک 2399، عادل آباد 2272، کریم نگر 2217، ورنگل2846 اور کھمم میں 1585 درخواستیں داخل کی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT