Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / اقامتی اسکولس کے لیے میدک اور کریم نگر میں عمارتوں کی نشاندہی

اقامتی اسکولس کے لیے میدک اور کریم نگر میں عمارتوں کی نشاندہی

آئندہ سال ذاتی عمارتیں ، ڈپٹی چیف منسٹر کی ہدایت پر کلکٹرس کا عمل
حیدرآباد۔8اگست (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی ریسیڈنشیل اسکول اسکیم کے تحت اقامتی اسکولس کی عمارتوں کے لئے سرکاری اراضیات کی نشاندہی کا سلسلہ زور و شور سے جاری ہے ۔ نائب وزیر اعلی ووزیرمال تلنگانہ جناب محمد محمود علی کی ہدایت پر ضلع میدک اور کریم نگر کے ڈسٹرکٹ کلکٹرس نے اقامتی اسکولس کی عمارتوں کیلئے اراضیات کی نشاندہی کی ہے۔واضح رہے کہ جناب محمد محمودعلی نے ریاست تلنگانہ کے تمام ڈسٹرکٹ کلکٹرس کو اقامتی اسکولس کی عمارتوں کی تعمیر کیلئے شہری علاقوں میں ایک تا پانچ اور دیہی علاقوں میں پانچ تا دس ایکڑ تنا زعات سے پاک سرکاری اراضیات کی نشاندہی کرنے کے احکامات جاری کئے تھے جس پر فوری رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے ضلع میدک اور کریم نگر کے ڈسٹرکٹ کلکٹرس نے اس سلسلے میں تفصیلات روانہ کی ہیںان اراضیات کو محکمہ مال ‘ حکومت تلنگانہ کی جانب سے منظوری حاصل ہونے کے بعد تعمیری کاموںکا عنقریب آغاز کیا جائے گا ۔ انہوں نے مزید بتایا چونکہ ان اسکولس میںجاریہ برس سے ہی تعلیمی کارکردگی کا آغازہوا اور سرکاری عمارتیں نہ ہونے کے باعث کرائے کی عمارتیں حاصل کی گئیں لیکن اگلے سال تک ان اسکولس کی ذاتی عمارتیں ہوں گی اور ان میں انٹر تک معیاری تعلیم فراہم کی جا ئے گی اس سلسلے میں ریاست کے تمام کلکٹرس کو اراضیات کی نشاندہی کرنے کے احکامات جاری کردئے گئے اس پر نہایت تیزی سے کام جاری ہے اور مختلف اضلاع سے رپورٹس موصول ہونے لگی ہیں ۔ جناب محمدمحمودعلی نے اس ضمن میں چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ کی ستائش کر تے ہوئے کہا کہ انہوں نے مسلم طبقے کا بھی خاص خیال کرتے ہوئے 71 اسکولس کو منظوری دی جس کا مقصد مسلم طبقے کے نوجوانوں کو تعلیم فراہم کرتے ہوئے ان کیلئے ترقی کی راہیں ہموار کرنا ہے کیوں کہ وہ جانتے ہیں کہ کسی بھی قوم کی پسماندگی کی اصل وجہ ناخواندگی اور ترقی کی اہم وجہ تعلیم ہوتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT