Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں میں آٹو کی فراہمی ‘ بینکرس نمائندوں کے ساتھ اجلاس

اقلیتوں میں آٹو کی فراہمی ‘ بینکرس نمائندوں کے ساتھ اجلاس

قرض کی منظوری کا عمل 8 نومبر تک مکمل کرنے کا فیصلہ ـ ‘ جلد جواب دینے بینکرس کا تیقن
حیدرآباد۔/27اکٹوبر، ( سیاست نیوز) حیدرآباد اور رنگاریڈی میں غریب اقلیتوں کو آٹو رکشا فراہمی سے متعلق اسکیم میں بینکرس کا تعاون حاصل کرنے آج مختلف بینکوں کے نمائندوں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا گیا۔ اجلاس میں بینکوں کو مشورہ دیا گیا کہ وہ اسکیم کی 50فیصد رقم جو بطور قرض منظور کی جائے گی اس کا شرح سود 12فیصد کے بجائے 10.5فیصد مقرر کریں کیونکہ یہ غریب اقلیتوں سے متعلق اسکیم ہے۔ تلنگانہ کے لیڈ بینک اور دیگر بینکوں کے نمائندوں نے اس سلسلہ میں بہت جلد جواب دینے کا تیقن دیا ہے۔ اقلیتی فینانس کارپوریشن کی جانب سے عمل کی جانے والی اس اسکیم کے اہل افراد کا انتخاب اور بینکوں سے قرض کی منظوری کا عمل 8نومبر تک مکمل کرلینے کا فیصلہ کیا گیا ہے تاکہ 11نومبر کو یوم اقلیتی بہبود کے موقع پر آٹو رکشا جاری کئے جاسکیں۔ بینکرس کے ساتھ اجلاس میں ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جلال الدین اکبر، منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ، ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور، آر ٹی اے عہدیدار دسردھم، جنرل منیجر کارپوریشن سید ولایت حسین کے علاوہ ایس بی آئی اور دیگر بینکوں کے عہدیداروں نے شرکت کی۔ اس اسکیم کے تحت دونوں اضلاع میں جملہ 2806 درخواستیں داخل کی گئیں جن میں حیدرآباد سے2239 اور رنگاریڈی سے 565درخواستیں داخل کی گئیں۔ کارپوریشن کے ایکزیکیٹو ڈائرکٹرس درخواستوں کی جانچ کررہے ہیں اور توقع ہے کہ کل تک یہ کام مکمل ہوجائے گا۔ 1200اہل امیدواروں کے انتخاب کا فیصلہ کیا گیا جن میں 200کو ویٹنگ لسٹ میں رکھا جائے گا۔ امیدواروں کے لائسنس کی سینیاریٹی کی بنیاد پر ترجیح دی جائے گی اور اگر دو امیدواروں کے لائسنس کی سینیاریٹی مساوی ہو تو زائد عمر والے امیدوار کو پہلی ترجیح دی جائے گی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ای ڈیز کی جانب سے تیار کردہ فہرست چہارشنبہ کو آر ٹی اے حکام کے حوالے کردی جائے جو اس بات کا جائزہ لیں گے کہ آیا امیدوار پہلے ہی سے آٹو کے مالک ہیں یا آٹو فینانس پر حاصل کیا ہے۔ ایسی درخواستوں کو مسترد کردیا جائے گا۔ بعد میں یہ فہرست لیڈ بینک کے حوالے کی جائے گی جو دیگر بینکوں میں کوٹہ الاٹ کرے گا۔ امیدوار کی رہائش گاہ کے قریبی برانچ کو قرض کی اجرائی کی ذمہ داری دی جائے گی۔ بینک میں دو اکاؤنٹ کھولے جائیں گے۔ منتخب امیدوار کیلئے اقلیتی فینانس کارپوریشن آٹو کی مالیت کی 50فیصد رقم نان آپریٹیو اکاؤنٹ میں جمع کرے گا جس کے بعد متعلقہ بینک آپریٹیو اکاؤنٹ میں مساوی رقم بطور قرض جاری کرتے ہوئے یہ رقم آٹو ڈیلر کیلئے مختص کی جائے گی۔ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ نے بتایا کہ یوم اقلیتی بہبود سے قبل اسکیم پر عمل آوری کو قطعیت دے دی جائے گی اور کارپوریشن حقیقی مستحقین کو شفاف انداز میں فائدہ پہنچانے کی کوشش کرے گا۔ انہوں نے واضح کردیا کہ امیدواروں کے انتخاب کے سلسلہ میں کوئی سفارش یا پیروی نہیں چلے گی۔

TOPPOPULARRECENT