Tuesday , September 26 2017
Home / ہندوستان / اقلیتوں میں مسلمان تعلیمی اعتبار سے دوسروں سے زیادہ پسماندہ ‘کمیٹی کی رپورٹ : مختار عباس نقوی

اقلیتوں میں مسلمان تعلیمی اعتبار سے دوسروں سے زیادہ پسماندہ ‘کمیٹی کی رپورٹ : مختار عباس نقوی

نئی دہلی ۔ 9جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) سرکاری مالیہ سے کام کرنے والی ایک کمیٹی کی رپورٹ کے بموجب مسلمان تعلیمی اعتبار سے اقلیتوں میں سب سے زیادہ پسماندہ طبقہ ہے ۔ صورتحال سے نمٹنے کیلئے کمیٹی نے ان مرحلوں پر مشتمل ایک طریقہ کار کی سفارش کی ہے ۔ مسلم طبقہ کو بااختیار بنانے کیلئے سنٹرل اسکولس ‘ برادری کے کالجس اور قومی ادارے قائم کئے جانے چاہیئے اور ان تعلیمی اداروں کو پرائمری اور سیکنڈری سطح پر بھی قائم کیا جانا چاہیئے ۔ ایسے 211اسکولس قائم ہوناچاہیئے ۔ برادری کیلئے 25کالج اور 5 قومی تعلیمی ادارے قائم کرنا بھی ضروری ہے ۔ کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں سفارش کی ہے کہ مجوزہ اسکول کیندریہ ودیالیہ یا نوودیہ ودیالیہ کے بند ہونے پر قائم کئے جانے چاہیئے ۔ برادری کے کالجس تک ہر ایک کی رسائی ضروری ہے ۔ ربط پیدا کرنے پر مرکزی وزیر برائے اقلیتی اُمور مختار عباس نقوی نے کہا کہ یہ سفارشات حکومت کی مہم کے مطابق ہے جس کے ذریعہ اقلیتوں کو تعلیمی اعتبار سے بااختیار بنانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم فی الحال رپورٹ کا جائزہ لے رہے ہیں ‘ اس کے بعد اس پر آئندہ تعلیمی سال سے عمل آوری کے طریقوں پرغور کیا جائے گا ۔ گذشتہ سال 29ڈسمبر کو مولانا آزاد تعلیمی فاؤنڈیشن نے 11رکنی کمیٹی قائم کی تھی جس کے کنوینر افضل امان اللہ سابق معتمد برائے حکومت تھے ۔ یہ ایک غیر منافع خور اور غیرسیاسی سماجی خدمات کی تنظیم تھی جس کیلئے مالیہ وزارت اقلیتی اُمور نے فراہم کیا تھا ۔

TOPPOPULARRECENT