Thursday , June 29 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں کو سیول سرویس کوچنگ ، اندرون ہفتہ اعلامیہ کی اجرائی

اقلیتوں کو سیول سرویس کوچنگ ، اندرون ہفتہ اعلامیہ کی اجرائی

کوچنگ سنٹرس کے انتخاب پر غور و خوص ، میناریٹی اسٹیڈی سرکل سے کوچنگ کی فراہمی
حیدرآباد۔17 نومبر (سیاست نیوز) اقلیتی طلبہ کے لئے سیول سرویسس کی کوچنگ کا اعلامیہ اندرون ایک ہفتہ جاری کردیا جائے گا۔ سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹیز کی جانب سے سیول سرویسس کوچنگ کا اہتمام کیا جارہا ہے۔ حکومت نے اقلیتی طلبہ کو اپنی پسند کے کوچنگ مراکز میں کوچنگ کے حصول کی سہولت فراہم کی ہے اور اس کے اخراجات حکومت برداشت کرے گی۔ گزشتہ سال کوچنگ سنٹرس کے انتخاب میں تاخیر کے سبب کوچنگ کا اہتمام نہیں کیا جاسکا۔ جاریہ سال محکمہ اقلیتی بہبود نے اس سلسلہ میں قائم کردہ تین رکنی کمیٹی کی سفارشات کی بنیاد پر حیدرآباد کے چار نامور کوچنگ سنٹرس میں اقلیتی طلبہ کو سیول سرویسس کی کوچنگ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان اداروں میں حیدرآباد اسٹیڈی سرکل، آر سی ریڈی آئی اے ایس اسٹیڈی سرکل، برین ٹری اور لا ایکسیلنس شامل ہیں۔ ان اداروں سے فیس کے مسئلہ پر مشاورت اور معاہدے کو قطعیت دینے کے لئے تین رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے۔ اس کمیٹی کا اجلاس آج سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کی نگرانی میں منعقد ہوا۔ کمیٹی کے ارکان تفسیر اقبال آئی پی ایس، بی شفیع اللہ اور پروفیسر ایس اے شکور نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں طے کیا گیا کہ اندرون ایک ہفتہ درخواست کی وصولی کے لئے اعلامیہ جاری کیا جائے گا اور آئندہ پیر کو چار کوچنگ سنٹرس کے ذمہ داروں سے ملاقات کرتے ہوئے فیس کا تعین کیا جائیگا۔ اس اسکیم کے تحت گزشتہ سال جن 60 طلبہ کا انتخاب کیا گیا تھا، ان میں سے 40 طلبہ نے جاریہ سال کوچنگ حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان 40 طلبہ نے اپنی پسند کے اداروں کا انتخاب کرلیا جہاں آئندہ ماہ کوچنگ کا آغاز ہوجائے گا۔ مزید 60 طلبہ کے انتخاب کے لئے اعلامیہ جاری ہوگا اور ریاست بھر سے درخواستیں طلب کی جائیں گی۔ درخواست کی جانچ اور اسکریننگ ٹسٹ کے ذریعہ طلبہ کا انتخاب ہوگا اور یہ عمل اندرون ایک ماہ مکمل کرلیا جائے گا۔ اس طرح دو بیچس میں جملہ 100 اقلیتی طلبہ آئی اے ایس پریلمس اور مینس امتحانات کی کوچنگ حاصل کریں گے۔ کمیٹی نے سفارش کی ہے کہ اضلاع سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو مقررہ ماہانہ 1500 روپئے اسٹیفنڈ کے بجائے 5000 روپئے ادا کیئے جائیں گے۔ اس کے علاوہ شہر سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو بس پاس کی رقم کے بجائے 2500 روپئے دیئے جائیں گے۔ ہر طالب علم کو اسٹیڈی مٹیریل متعلقہ سنٹر کی جانب سے سربراہ کیا جائے گا۔ تاہم ایڈیشنل مٹیریل کی خریدی کے لئے 3000 روپئے دیئے جائیں گے۔ سیول سرویسس میں اقلیتی طلبہ کی کم نمائندگی کو دیکھتے ہوئے حکومت نے نامور اداروں سے کوچنگ کی فراہمی کا فیصلہ کیا ہے۔ سابق میں سی ای ڈی ایم کے ذریعہ کوچنگ فراہم کی جارہی تھی، لیکن خاطر خواہ نتائج برآمد نہیں ہوئے۔ کوچنگ کی ذمہ داری میناریٹیز اسٹیڈی سرکل کو دی گئی تھی بعد میں یہ کام پروفیسر ایس اے شکور کی نگرانی میں سی ای ڈی ایم کے حوالے کیا گیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT