Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتوں کی اسکیمات میں انسداد دھاندلیوں کیلئے ہیلپ لائن سنٹر کا قیام

اقلیتوں کی اسکیمات میں انسداد دھاندلیوں کیلئے ہیلپ لائن سنٹر کا قیام

اسکیمات کی تمام تفصیلات کی فراہمی، انچارج محکمہ اقلیتی بہبود اے کے خان کا بیان
حیدرآباد۔/9اپریل، ( سیاست نیوز) اقلیتی بہبود کے اداروں اور اسکیمات میں بے قاعدگیوں کی روک تھام کیلئے حج ہاوز میں ہیلپ لائن سنٹر کے قیام کا فیصلہ کیا گیا۔ اس سنٹر پر تمام اداروں اور ان کی اسکیمات سے متعلق تفصیلات موجود رہیں گی اور عوام کی رہنمائی کی جائے گی۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو عبدالقیوم خاں جو محکمہ اقلیتی بہبود کے انچارج ہیں انہوں نے بتایا جاتا ہے کہ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کو اس طرح کے ہیلپ لائن سنٹر کے قیام کیلئے ہدایت دی۔ حج ہاوز کے گراؤنڈ فلور پر ہیلپ لائن اور معلوماتی سنٹر کی تعمیر کا کام جاری ہے اور توقع ہے کہ آئندہ ہفتہ اس کا باقاعدہ آغاز ہوجائے گا۔ اقلیتی فینانس کارپوریشن کو اس سنٹر کے قیام کی ذمہ داری دی گئی جہاں اقلیتی فینانس کارپوریشن کی اسکیمات کے علاوہ اردو اکیڈیمی، حج کمیٹی، وقف بورڈ سے متعلق اُمور کے بارے میں عوام کی رہنمائی کی جائے گی۔ اسکیمات سے استفادہ کیلئے درخواستوں کے ادخال کے طریقہ کار یا پھر درخواستوں کے موقف کے بارے میں جاننے کیلئے یہ سنٹر کارکرد ثابت ہوگا۔ بتایا جاتا ہے کہ عہدیدار مجاز کی حیثیت سے سکریٹری اقلیتی بہبود نے ہیلپ لائن سنٹر کے قیام کی اجازت دی لیکن اقلیتی فینانس کارپوریشن کو سنٹر کے قیام کیلئے اصولی طور پر وقف بورڈ سے اجازت حاصل کرنی چاہیئے جو ابھی تک حاصل نہیں کی گئی۔ وقف بورڈ کے حکام اس طرح کے کسی بھی سنٹر کے قیام سے لاعلم ہیں۔ عوام کا کہنا ہے کہ بے قاعدگیوں اور کرپشن کی روک تھام کیلئے یہ سنٹر کارگر ثابت نہیں ہوسکتا۔ کرپشن کے خاتمہ کیلئے اداروں میں درمیانی افراد کے رول کو ختم کرنا ہوگا کیونکہ اقلیتی اداروں کے عہدیداروں اور ملازمین کی درمیانی افراد سے ملی بھگت ہے اس کے خاتمہ تک کرپشن کا خاتمہ ممکن نہیں۔ عوام کا یہ بھی احساس ہے کہ انفارمیشن سنٹر خود بھی اس طرح کی سرگرمیوں کا مرکز بن سکتا ہے۔ اس سنٹر کی سرگرمیوں پر اینٹی کرپشن بیورو کی جانب سے نظر رکھنے کی ضرورت ہے۔

TOPPOPULARRECENT