Sunday , October 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اقلیتوں کی ترقی کیلئے کئی اختراعی اسکیمات روشناس

اقلیتوں کی ترقی کیلئے کئی اختراعی اسکیمات روشناس

میدک میں مسلم شادی خانہ کی سنگ بنیاد تقریب، ریاستی وزیر ہریش راؤ کا خطاب
میدک 21 اگسٹ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سنہرے تلنگانہ کے قیام کے لئے ریاستی مسلمانوں کی ہمہ جہتی ترقی کے ساتھ ہندو مسلم اتحاد کی بھی ضرورت ہے۔ ریاستی وزیر اعلیٰ اقلیتوں کی ترقی کے لئے کئی ایک اختراعی پالیسیاں روبہ عمل لارہے ہیں۔ اقلیتوں کو چاہئے کہ ان منراعات سے مستفید ہوں۔ حکومت اقلیتوں کی ترقی کے لئے 12 فیصد تحفظات کی پابند ہے۔ ذہین مسلم طلبہ کو بیرونی یونیورسٹیز میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لئے 25 کروڑ روپئے مختص کئے گئے ہیں۔ ریاستی وزیر بھاری آبپاشی مسٹر ٹی ہریش راؤ میدک ٹاؤن میں مسلم شادی خانے کی تعمیر کے لئے سنگ بنیاد رکھنے کے دوران ان خیالات کا اظہار کیا۔ ان کے ہمراہ مقامی رکن اسمبلی ریاستی ڈپٹی اسپیکر قانون ساز اسمبلی محترمہ ایم پدما دیویندر ریڈی بھی تھیں۔ ریاستی وزیر نے کہاکہ شادی خانہ کی تعمیر کے لئے ایک کروڑ روپئے صرف کئے جائیں گے قلب شہر اعظم پورہ میں اس مقصد کے لئے ایک ایکر اراضی الاٹ کی گئی ہے۔ ریاستی وزیر نے مزید بتایا کہ بیرونی یونیورسٹیز میں اعلیٰ تعلیم ضلع میدک سے 6 طلبہ کا انتخاب ہوا ہے جنھیں فی کس 10 لاکھ روپئے کی امداد فراہم کی جائے گی۔ انھوں نے کہاکہ ملک کی کسی بھی ریاست میں مسلمانوں کو رمضان کے مہینہ میں سرکاری طور پر افطار پارٹیاں معہ ضیافت کا نظم کہیں نہیں ہے بلکہ کے سی آر نے اس طرح کا اختراعی پروگرام کا آغاز کیا۔ انھوں نے بتایا کہ امسال رمضان میں غریب مسلمانوں کو ملبوسات گفت پیاکیج بھی دیا گیا۔ ریاستی وزیر نے کہاکہ میدک ٹاؤن مسلم شادی خانہ کی تعمیر جنگی خطوط پر کی جائے گی۔ انھوں نے امید ظاہر کیاکہ آئندہ رمضان میں یہاں افطار پارٹی دی جائے گی۔ انھوں نے کہاکہ شادی مبارک اسکیم کے تحت ضلع میدک میں 1500 سے زائد مستحقین میں 7 کروڑ 80 لاکھ روپئے کی تقسیم عمل میں آئی۔ انھوں نے کہاکہ آئندہ سال ضلع میدک میں مسلمانوں کے لئے دو انگلش میڈیم مدارس کھولے جائیں گے۔ ہریش راؤ کی میدک ٹاؤن آمد پر محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیدار جناب سید احمد علی، محمد شاکر اور صدر ٹاؤن اقلیتی سیل ٹی آر ایس مسٹر محمد فاضل، ناظم مدرسہ عربیہ مدینۃ العلوم مولانا محمد جاوید علی حسامی نے خیرمقدم کیا۔ اس موقع پر سکریٹری ٹی آر ایس ایم دیویندر ریڈی، کونسلر بلدیہ مسٹر خواجہ سہیل محی الدین، سابق کونسلر غوث قریشی، کونسلر اعظم پورہ مسٹر ایم مدھو سدن راؤ، ڈپٹی چیرمین بلدیہ راگی اشوک، کونسلرس مسرز ایم گنگادھر، سید صادق کے علاوہ راما گوڑ ، مقامی ذی اثر افراد مسرز محمد عارف حسین، عادل قریشی، محمد نعیم الدین، عمر خان، شبیر بھائی، ایم اے معید ماجد، ایم اے رؤف، سید اسرارالدین، عمر محی الدین، جناب خورشید احمد، مولانا شعیب احمد، مولانا میر عابد علی، کلیم بھائی گلشنی، سید منیر رکن معاون بلدیہ، عابد علی شطاری، محمد اقبال، محمد مجیب، محمد غفار، کمشنر بلدیہ تحصیلدار میدک مسٹر نوین انچارج مسٹر ایم رامیشور راؤ بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT