Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتو ں کی ترقی، ہر غریب کو ڈبل بیڈ روم اور ہر گھر کو نل کنکشن

اقلیتو ں کی ترقی، ہر غریب کو ڈبل بیڈ روم اور ہر گھر کو نل کنکشن

کلین اینڈ گرین اور اسمارٹ سٹی کا وعدہ، مفت وائی فائی، آر ٹی سی کی نئی بسیں، میٹرو ریل کا دوسرا مرحلہ
’’ ہمارا حیدرآباد ترقی میں آگے‘‘ ٹی آر ایس کا انتخابی منشور جاری، رائے دہندوں سے 55 سے زائد وعدے

حیدرآباد۔/23جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے شہر میں بلالحاظ مذہب و ملت ہر شخص کی ترقی، ہر غریب کو ڈبل بیڈ روم مکان کی فراہمی، ہر گھر کو پینے کے پانی کا کنکشن، سلم فری سٹی اور اقلیتوں کیلئے ترقی سے متعلق جامع پیاکیج جیسے وعدوں پر مشتمل انتخابی منشور جاری کیا ہے۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن انتخابات کیلئے ٹی آر ایس نے 18شعبہ جات میں 55 سے زائد وعدوں پر مشتمل انتخابی منشور آج تلنگانہ بھون میں جاری کیا۔ ٹی آر ایس کے قومی سکریٹری جنرل ڈاکٹر کیشو راؤ، حکومت کے مشیر ڈی سرینواس اور وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے انتخابی منشور جاری کرتے ہوئے عوام سے وعدہ کیاکہ حیدرآباد کو ہر شعبہ میں ترقی دیتے ہوئے عالمی معیار کا شہر بنایا جائے گا۔ ’’ ہمارا حیدرآباد سب سے آگے، ترقی میں آگے‘‘ کے نعرہ کے ساتھ انتخابی منشور تیار کیا گیا ہے جس میں تمام طبقات کے مسائل کا احاطہ کیا گیا ہے۔ انتخابی منشور میں اقلیتوں کی سماجی، معاشی اور تعلیمی ترقی کیلئے کمیشن آف انکوائری کے قیام کا حوالہ دیتے ہوئے کمیشن کی رپورٹ کی بنیاد پر اقلیتوں کی ترقی کیلئے تمام ضروری اقدامات کرنے اور اسکیمات کی تیاری کا وعدہ کیا گیا ہے۔ انتخابی منشور میں اسکول اور کالجس میں اردو کو پہلی زبان کا درجہ دینے کا وعدہ کیا گیا۔ بیرونی ممالک میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کیلئے جانے والے 500 اقلیتی طلباء کو اوورسیز اسکالر شپ اسکیم سے امداد کی فراہمی، اقلیتی طلباء کیلئے ہر ضلع میں ایک اقامتی اسکول اور ہر ضلع میں ایک جونیر کالج کے قیام کا وعدہ کیا گیا۔ اسکولوں میں طلباء کی تعداد فی کس 500اور کالجس میں 100ہوگی اور تمام بنیادی سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔ شادی مبارک اسکیم کے تحت غریب لڑکیوں کی شادی کیلئے 51ہزار روپئے امداد کی اسکیم اور حیدرآباد اور رنگاریڈی کے 1000غریب اقلیتی خاندانوں کو 50فیصد سبسیڈی پر آٹو رکشا کی اجرائی کا اعلان کیا گیا۔ اقلیتی طلباء و طالبات کیلئے ادارہ TASK کے ذریعہ ٹیکنیکل کورسیس میں ٹریننگ فراہم کی جائے گی۔ پارٹی نے حیدرآباد کو کلین اینڈ گرین سٹی میں تبدیل کرتے ہوئے ہر شہری کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور برقی اور آبرسانی جیسے مسائل پر مکمل قابو پانے کا وعدہ کیا گیا۔ حیدرآباد نہ صرف صاف ستھرا شہر بنایا جائے گا بلکہ شہریوں کیلئے محفوظ اور اسمارٹ سٹی کے طور پر دنیا بھر میں اپنی شناخت بنائے گا۔ گھٹکیسر، شاہ میر پیٹ سڑک کی تعمیر کیلئے جاریہ سال کے اختتام تک 158کلو میٹر کی آؤٹر رونگ روڈ کی تعمیر مکمل کرلی جائے گی۔ شہر کو پانی سربراہ کرنے والے ذخائر آب عثمان ساگر اور حمایت ساگر اور اس کے احیاء کا وعدہ کیا گیا۔ حسین ساگر سے آلودگی کو ختم کرتے ہوئے اسے صاف پانی کی جھیل میں تبدیل کرنے کے اقدامات کا ذکر انتخابی منشور میں کیا گیا ہے۔ پارٹی نے بلا وقفہ برقی کی سربراہی، ایم ایم ٹی ایس دوسرے مرحلہ کے جلد آغاز، آر ٹی سی کیلئے گریٹر حیدرآباد میں نئی بسوں کی خریدی، مفت وائی فائی کی فراہمی، 130کروڑ روپئے سے 200نئی مارکٹس کی تعمیر، خانگی شعبہ کے اشتراک سے سیکلنگ پیاڈ کی تعمیر ، خواتین کے تحفظ کے خصوصی اقدامات، 13سلم علاقوں میں 17مقامات پر ڈبل بیڈروم مکانات کی تعمیر کا آغاز، 5روپئے میں کھانے کی فراہمی کے 200 مراکز میں اضافہ، بیروزگاروں کو روزگار کے مواقع، رئیل اسٹیٹ پراجکٹس کی اجازت کیلئے سنگل ونڈو سسٹم، خانگی اسکولوں کی فیس پر کنٹرول کیلئے سخت قوانین، سرکاری اسکولوں میں ڈیجیٹل کلاسیس کا آغاز، سرکاری مدارس میں انفراسٹرکچر کی فراہمی، کمپیوٹر، انٹر نیٹ سہولت اور ای لائبریریز کا قیام ۔ شہر میں امن و ضبط کی صورتحال پر نگرانی کیلئے ایک لاکھ سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب اور پولیس کو عصری بنانے کیلئے 685کروڑ کے خرچ جیسے اُمور کو شامل کیا گیا ہے۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر کیشو راؤ نے کہا کہ انتخابی منشور حیدرآبادی عوام کی ضرورتوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے تیار کیا گیا ہے اور اسے مسائل کے جانکار افراد نے قطعیت دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر حیدرآباد کو عالمی معیار کا شہر بنانے میں سنجیدہ ہیں اور چیف منسٹر کی نگرانی میں منشور کو قطعیت دی گئی ہے۔ ڈی سرینواس نے کہا کہ 20سے زائد پسماندہ طبقات کی بھلائی کا انتخابی منشور میں احاطہ کیا گیا۔ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی آر نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں مختلف مسائل کیلئے 36 قبرستانوں کیلئے  جگہ کی فراہمی کا منصوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد کلین اینڈ گرین سٹی کے علاوہ ایک محفوظ شہر کے طور پر اپنی شناخت بنائے گا۔ حیدرآباد کے محلہ جات اور کالونیاں نہ صرف محفوظ ہوں گی بلکہ ماڈل علاقوں کی طرح ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کے عوام کے ساتھ دوستانہ رویہ کو یقینی بنانے کیلئے ٹریفک پولیس کو باڈی کیمرے فراہم کئے گئے ہیں۔ خواتین پر مظالم اور چھیڑ چھاڑ کے واقعات کو روکنے شی ٹیمیں تشکیل دی گئیں۔ محکمہ پولیس میں خواتین کو 33فیصد تحفظات فراہم کئے گئے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ آئندہ پانچ برسوں میں شہر میں ایک لاکھ ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔ کے ٹی راما راؤ نے اسے حیدرآبادیوں کا منشور اور حیدرآبادیوں کی تمام ضرورتوں کا احاطہ کرنے والا منشور قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ مشن بھگیرتی کے تحت گھر گھر پینے کے پانی کا کنکشن فراہم کرنے کیلئے 1900 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ شہر میں برقی کی پیداوارمیں اضافہ کیلئے علحدہ پاور آئی لینڈ تعمیر کیا جائے گا جس پر 1920 کروڑ روپئے خرچ کئے جائیں گے۔ نئے سب اسٹیشن اور 420/KV صلاحیت والے گرڈ کی تعمیر عمل میں آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میٹرو ریل پراجکٹ کے دوسرے توسیعی مرحلہ کے کام کا جاریہ سال آغاز ہوگا جو 72تا 200کلو میٹر پر مبنی ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT