Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اقامتی اسکولس میں داخلہ کیلئے رہبری و رہنمائی کا مرکز

اقلیتی اقامتی اسکولس میں داخلہ کیلئے رہبری و رہنمائی کا مرکز

سعیدآباد روبرو مسجد قادریہ پر قائم، سیاست و ایم ڈی ایف کا اعلان
حیدرآباد 18 مئی (راست) تلنگانہ میناریٹی اقامتی اسکولس کے رجسٹریشن اور ضروری معلومات کے لئے میناریٹی ڈیولپمنٹ فورم (ایم ڈی ایف) اور ادارہ سیاست کی جانب سے ایک آفس سعیدآباد روبرو مسجد قادریہ H.No.16-2-835/A/6 سعیدآباد کالونی میں قائم کیا گیا ہے۔ ایسے حضرات جو اپنے لڑکوں اور لڑکیوں کو اقامتی اسکولس میں داخلہ کروانے سے قبل ضروری اور اطمینان بخش معلومات کا حصول اور اسپاٹ پر فارم رجسٹریشن کروانا چاہتے ہیں تو ایسے حضرات کو پوری رہنمائی فراہم کی جائے گی۔ خاص طور پر ایسے حضرات جو اپنے لڑکوں کو سعیدآباد بوائز اقامتی اسکول میں شریک کروانا چاہتے ہیں اور جو سعیدآباد کالونی، کرما گوڑہ، مادنا پیٹ، سرور نگر، قدیم عیدگاہ، سنتوش نگر، خواجہ باغ، سپوٹا باغ، سنکے سر بازار کے رہنے والے ہیں، پوری طمانیت کے ساتھ اقامتی اسکولس کے بارے میں ساری معلومات فراہم کی جائیں گی۔ موبائیل نمبر 9246521334 پر میر انورالدین نائب صدر ایم ڈی ایف سے ربط کریں۔

 

آر ڈی ایس کام میں تعاون کرنے اے پی حکومت سے خواہش
ضلع کلکٹر کو روانہ کردہ مکتوب سے دستبرداری کا حکومت تلنگانہ کا مطالبہ
حیدرآباد ۔ 18 ۔ مئی : ( این ایس ایس ) : حکومت تلنگانہ نے کرشنا ریور مینجمنٹ بورڈ کے آر بی ایم کو ایک مکتوب روانہ کرتے ہوئے اس بات کی خواہش کی ہے کہ وہ راجولی بنڈہ ڈائیورشن اسکیم کے کاموں میں تعاون کرنے حکومت آندھرا پردیش کو راغب کریں ۔ پرنسپال سکریٹری آبپاشی ایس کے جوشی نے کے آر بی ایم کو مکتوب روانہ کرتے ہوئے کہا کہ آر ڈی ایس کام اس خطوط پر کیا جانا ہے کہ اس سے تلنگانہ کو 15.90 ٹی ایم سی فیٹ پانی حاصل ہو جب کہ ریاستی تنظیم جدید بل اور کرشنا ٹریبونل نے اس بات کو واضح کردیا ہے کہ بیاریج کی سطح آب میں اضافہ سے کرنول کے کسان متاثرہ نہیں ہوں گے ۔ انہوں نے کے آر بی ایم سے کہا ہے کہ وہ اے پی محکمہ آبپاشی عہدیداروں سے اس بات کی خواہش کریں آر ڈی ایس پر حکومت کرناٹک کو روانہ کردہ خط سے وہ دستبردار ہوجائیں بتایا گیا ہے کرنول ضلع عہدیداروں نے آر ڈی ایس کو عصری بنانے کے کام پر روک لگانے کے لیے رائچور کلکٹر کو مکتوب روانہ کیا تھا اس پر رائچور کلکٹر نے یہاں کام کو روکنے کے احکام جاری کئے تھے ۔ اس سلسلہ میں تلنگانہ کے وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے اپنے ہم منصب ڈی اوما مہیشور راؤ کو ٹیلی فون کرتے ہوئے رائچور کلکٹر کو روانہ کردہ اے پی عہدیداروں کے مکتوب سے دستبردار ہوجانے کہا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT