Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اقامتی اسکولس کی عمارتوں کا انتخاب

اقلیتی اقامتی اسکولس کی عمارتوں کا انتخاب

اے کے خاں کی نگرانی میں 23 اپریل تک تمام امور کو قطعیت
حیدرآباد۔/19اپریل، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں اقلیتوں کیلئے قائم ہونے والے انگلش میڈیم اقامتی اسکولس کی عمارتوں کے انتخاب کا کام تقریباً مکمل ہوچکا ہے۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو اے کے خاں کی نگرانی میں مختلف اقلیتی اداروں کے عہدیدار مختلف اضلاع میں عمارتوں کے انتخاب میں مصروف ہیں۔ 23 اپریل تک تمام 71 اسکولوں کیلئے عمارتوں کا انتخاب اور مالکین سے کرایہ ناموں کو قطعیت کا کام مکمل ہوجائے گا۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ اور سکریٹری ڈائرکٹر اردو اکیڈیمی پروفیسر ایس اے شکور اضلاع کھمم اور کریم نگر کے دورہ پر ہیں جہاں عمارتوں کے انتخاب کو قطعیت دی جارہی ہے۔ ان دونوں عہدیداروں نے مختلف منڈلوں کا دورہ کیا جہاں اقامتی اسکولس قائم کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے مقامی عہدیداروں اور عوام کے تعاون سے عمارتوں کا انتخاب کیا اور مالکین سے بات چیت کی۔ کرایہ کے سلسلہ میں اختلاف کی صورت میں معاملات کو متعلقہ ضلع کلکٹر سے رجوع کردیا گیا ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے بتایا کہ کریم نگر کے سرسلہ، راما گنڈم، حضور آباد اور جگتیال میں عمارتوں کا انتخاب کرلیا گیا اور مالکین نے 15مئی تک عمارتوں کی داغ دوزی اور مرمت کا کام مکمل کرنے کا تیقن دیا ہے۔ پروفیسر ایس اے شکور نے کریم نگر کلکٹریٹ میں عہدیداروں کے ساتھ اجلاس منعقد کرتے ہوئے انہیں اسکیم کی کامیابی کیلئے ضروری ہدایات جاری کی۔ انہوں نے اسکولوں میں داخلہ کو یقینی بنانے غیر سرکاری تنظیموں اور مذہبی اداروں کا تعاون حاصل کرنے کا مشورہ دیا۔ اے کے خاں جو اسکولوں سے متعلق سوسائٹی کے نائب صدر نشین ہیں انہوں نے تمام انچارج عہدیداروں کو رہنمایانہ خطوط جاری کئے ہیں۔ 15مئی تک تمام عمارتیں اسکول سوسائٹی کے حوالے کردی جائیں گی اور ان میں بنیادی انفراسٹرکچر جیسے الماریوں، پلنگ، بنچ اور دیگر سہولتوں کی فراہمی کا آغاز ہوگا۔ فرنیچر کی سربراہی کے سلسلہ میں اے کے خاں نے عہدیداروں سے کہا کہ وہ انتہائی معیاری فرنیچر کو ترجیح دیں۔ آن لائن درخواستوں کے سسٹم کا چیف منسٹر کے ہاتھوں افتتاح کیا جائے گا۔ چیف منسٹر کی ناسازی مزاج کے سبب اس پروگرام میں کسی قدر تاخیر ہوئی ہے۔ اے کے خاں چاہتے ہیں کہ ہر ضلع سے ایک لڑکا اور لڑکی کو منتخب کیا جائے اور چیف منسٹر کی موجودگی میں ان کا آن لائن رجسٹریشن ہو۔ انہوں نے پبلسٹی ویانس پر اردو زبان میں موجود غلطیوں کی اصلاح کی ہدایت دی۔

TOPPOPULARRECENT