Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اقامتی اسکولوں کی آج سے کشادگی

اقلیتی اقامتی اسکولوں کی آج سے کشادگی

ریاست کے تمام 142 اسکولوں میں طلبہ کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی ، جناب شفیع اللہ کا بیان

حیدرآباد۔11جون (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں چلائے جانے والے اقلیتی اقامتی اسکولوں کی 12جون سے کشادگی عمل میںلائی جائے گی اور ریاست کے مختلف اضلاع میں 12جو ن کو سال گذشتہ چلائے گئے 71اقامتی اسکولوں کے علاوہ نئے 71اقامتی اسکول اور 12قدیم اقامتی اسکول و 2جونیئر کالجس میں تعلیمی سال 2017-18کا آغاز ہوگا۔ جناب بی شفیع اللہ آئی ایف ایس سیکریٹری تلنگانہ مائناریٹیز ریسڈنشیل ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنس سوسائیٹی نے آج ایک پریس کانفرنس کے دوران یہ بات بتائی۔ انہوں نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ میں حکومت کی جانب سے چلائے جانے والے ان اسکولوں میں تعلیم کا آغاز ہو جائے گا اور تمام 142اسکولوں میں طلبہ کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی و دیگر اشیاء ضروریہ کی فراہمی کا انتظام کردیا گیا ہے۔ جناب بی شفیع اللہ نے بتایا کہ 12جون کو شروع ہونے والے ان 142اسکولوں میں سال گذشتہ چلائے گئے 71اسکول شامل ہیں اور ان اسکولوں میں ایک کلاس یعنی آٹھویں جماعت کا اضافہ کیا گیا ہے اور جو نئے 71اسکول کھولے گئے ہیں ان میں 5ویں‘ 6ویں اور7ویں جماعت کی تعلیم دی جائے گی۔ انہوں نے مزید تفصیلات سے واقف کرواتے ہوئے کہا کہ ریاست تلنگانہ میں 19جون کو مزید 50اسکولوں کی کشادگی عمل میں لائی جائے گی اور ان اسکولوں میں بھی داخلوں کا عمل مکمل کیا جا چکا ہے۔ پریس کانفرنس میں ان کے ہمراہ اس موقعہ پر جناب سید ولایت حسین رضوی بھی موجود تھے۔ جناب بی شفیع اللہ آئی ایف ایس نے بتایا کہ ریاست تلنگانہ میں حکومت تلنگانہ کی جانب سے چلائے جانے والے اسکولوں میں12جون کو جہاں تعلیم شروع کی جائے گی ان میں طلبہ کی تعداد 38ہزار سے تجاوز کرگئی ہے اور مزید 50اسکولوں کی کشادگی کے بعد یہ تعداد قریب ایک لاکھ تک پہنچ جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے سابق میں شروع کردہ 12اقامتی اسکول اور 2جونیئر کالجس جو محکمہ سماجی بہبود کے تحت چلائے جاتے تھے انہیں بھی اس مرتبہ سرکاری احکامات کے ذریعہ تلنگانہ مائناریٹیز ریسڈنشیل ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنس سوسائیٹی کے حوالے کردیا گیا ہے ا س طرح 12جون کو جملہ 154اسکولوں میں تعلیم کا آغاز ہوگا اور 2جونئیر کالجس میں تعلیم کی فراہمی شروع کردی جائے گی۔ جناب بی شفیع اللہ نے کہا کہ ریاستی حکومت کے احکام کے مطابق تمام اسکولو ںمیں طلبہ کو معیاری فرنیچر اور اشیائے ضروریہ کی فراہمی کے انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں اور تلنگانہ مائناریٹیز ریسڈنشیل ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنس سوسائیٹی کا عملہ گذشتہ کئی دنوں سے اسکولوں کی کشادگی کیلئے انتظامات میں شب و روز مصروف رہا ہے۔ انہوں نے ان اسکولوں میں کنٹراکٹ اساس پر کئے گئے تقررات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی سال کے آغاز سے قبل ان اسکولوں میں درکار اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ کے تقرر کا عمل مکمل کرلیا گیا اوربہت جلد حکومت کی جانب سے احکام کی اجرائی کے بعد باضابطہ تدریسی و غیر تدریسی عملہ کا تلنگانہ پبلک سروس کمیشن کے ذریعہ تقرر عمل میں لایا جائے گا۔ جناب بی شفیع اللہ نے بتایا کہ محکمہ سماجی بہبود کے تحت جو جونیئر کالجس اور اسکولس چلائے جا رہے تھے ان میں مزید طلبہ کے داخلوں کی گنجائش کا جائزہ لیا جا رہاہے اور مخلوعہ نشستوں پر داخلوں کے لئے بہت جلد اقدامات کئے جائیں گے تاکہ طلبہ کو مزید بہتر سہولتوں کے ساتھ ان اسکولوں میں داخلوں کے لئے راغب کروایا جا سکے۔

TOPPOPULARRECENT