Thursday , May 25 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اقامتی اسکول عمارتوں کا کرایہ مقرر کرنے کلکٹرس کو ذمہ داری

اقلیتی اقامتی اسکول عمارتوں کا کرایہ مقرر کرنے کلکٹرس کو ذمہ داری

درمیانی افراد اور بے قاعدگیوں کو ختم کرنے کی کوشش ، سکریٹری فینانس کی ہدایت
حیدرآباد۔17 فبروری (سیاست نیوز) حکومت نے اقلیتی اقامتی اسکولس کی عمارتوں کا کرایہ مقرر کرنے کا اختیار متعلقہ ضلع کلکٹرس کو دیا ہے۔ اس سلسلہ میں آج محکمہ فینانس سے احکامات جاری کئے گئے۔ سکریٹری فینانس این شیو شنکر کے مطابق محکمہ اقلیتی بہبود نے حکومت کی جانب سے قائم کئے جانے والے اقلیتی اقامتی اسکولس کا کرایہ مقرر کرنے کی ذمہ داری ضلع کلکٹرس کو دیئے جانے کی درخواست کی ہے۔ حکومت نے اس تجویز سے اتفاق کیا ہے۔ چیف منسٹر کی جانب سے اعلان کردہ 129 نئے اقامتی اسکولس کی عمارتوں کا کرایہ ضلع کلکٹرس مقرر کریں گے۔ اس سلسلہ میں 19 مئی 2016ء کو جاری کردہ احکامات کا اطلاق ہوگا۔ واضح رہے کہ اقامتی اسکولس کے لیے خانگی عمارتوں کی نشاندہی کی جارہی ہے۔ شہر اور اضلاع میں ابھی تک 80 سے زائد عمارتوں کی نشاندہی کرلی گئی تاہم کرائے کے سلسلہ میں معاہدہ کرنا باقی ہے۔ پہلے مرحلہ میں قائم کردہ 71 اقامتی اسکولس کے کرائے کے سلسلہ میں مختلف شکایات موصول ہورہی تھیں۔ بتایا جاتا ہے کہ بعض درمیانی افراد نے بلڈنگ مالکین سے ملی بھگت کے ذریعہ زائد کرایہ دلانے کا وعدہ کرتے ہوئے اپنا کمیشن مقرر کرلیا ہے۔ اس طرح کی بے قاعدگیوں کو روکنے کے لیے ضلع کلکٹرس کو یہ ذمہ داری دی گئی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT