Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی اقامتی اسکول میں طالب علم کی مشتبہ موت

اقلیتی اقامتی اسکول میں طالب علم کی مشتبہ موت

۔12 سالہ محمد فریدالدین کی پھانسی لیکر خودکشی سے سنسنی
حیدرآباد /12 جولائی ( سیاست نیوز ) شاہ پور نگر کے اقلیتی اقامتی اسکول میں ایک طالب علم کی مشتبہ موت کا واقعہ پیش آیا ۔ اس واقعہ کے بعد سرکاری حلقوں میں سنسنی پھیل گئی ۔ بتایا جاتا ہے کہ 12 سالہ محمد فریدالدین نے کل رات ہاسٹل کے کمرے میں پھانسی لیکر خودکشی کرلی ۔ فریدالدین 6 ویں جماعت کا طالب علم تھا ۔ تقریباً ایک ہفتہ قبل وہ ہاسٹل میں شریک کروایا گیا تھا ۔ اپنی والدہ کا اکلوتتا فرید کو اس کی والدہ بہتر تعلیم دینا چاہتی تھی ۔ اس کے والد نجم الدین کا انتقال ہوچکا تھا ۔ پولیس ذرائع کے مطابق فرید کو ہاسٹل میں رہنا پسند نہیں تھا ۔ اس سلسلہ میں انسپکٹر آف پولیس جیڈی میٹلہ مسٹر شنکر ریڈی نے بتایا کہ فرید کو اس سے قبل بھی ہاسٹل میں داخلہ دلایا گیا تھا لیکن اس کی ضد اور ناپسندیدگی کے سبب اس لڑکے کو روانہ کردیا گیا تھا ۔ تاہم ایک ہفتہ قبل اس کی والدہ اختری بیگم نے اپنے لڑکے کو سمجھا کر ہاسٹل میں شریک کروایا تھا اور گذشتہ چند روز سے یہ لڑکا گم سم تھا ۔ جس نے کل رات تقریباً 11 تا 12 بجے کے درمیان اپنے ہاسٹل کے کمرے میں فیان کے ہک سے پھانسی لیکر خودکشی کرلی ۔ انسپکٹر نے بتایا کہ بیڈشیٹ کو پھاڑ کر اس نے فیان کے ہک کا استعمال کیا ۔ دوسری طرف ہاسٹل انتظامیہ کی مبینہ لاپرواہی اور لڑکے کے ساتھ سخت رویہ کے علاوہ مارپیٹ کے سنگین الزامات بھی پائے جاتے ہیں ۔ تاہم پولیس نے ان تمام الزامات کو بے بنیاد قرار دیا اور بتایا کہ ابتدائی تحقیقات میں لڑکے کی خودکشی کی وجوہات کا صاف اندازہ ہوجاتا ہے ۔ اس لڑکے کو ہاسٹل میں رہتے ہوئے تعلیم حاصل کرنا پسند نہیں تھا ۔ پولیس نے مقدمہ درج کرلیا اور مصروف تحقیقات ہے ۔

TOPPOPULARRECENT