Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی بہبود اسکیمات سے دلالوں کو دور رکھنے سنٹر کا قیام

اقلیتی بہبود اسکیمات سے دلالوں کو دور رکھنے سنٹر کا قیام

حکومت کی امداد سے حقیقی مستحقین محروم ، شفیع اللہ کا بیان
حیدرآباد۔/12اپریل، ( سیاست نیوز) اقلیتی بہبود کی مختلف اسکیمات میں درمیانی افراد کے رول کو ختم کرنے کیلئے اقلیتی فینانس کارپوریشن نے حج ہاوز میں انفارمیشن سنٹر قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سنٹر میں تمام اقلیتی اسکیمات کی تفصیلات دستیاب رہیں گی اور استفادہ کیلئے درخواستوں کے ادخال کیلئے رہنمائی کی جائے گی۔ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن بی شفیع اللہ کے مطابق اقلیتی اسکیمات کے سلسلہ میں حالیہ عرصہ میں درمیانی افراد کے رول میں اضافہ کی شکایات ملی ہیں جس سے حقیقی مستحقین حکومت کی امداد سے محروم ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچانے کیلئے حج ہاوز کے گراؤنڈ فلور پر انفارمیشن سنٹر قائم کیا جارہا ہے جس کا جلد ہی افتتاح عمل میں آئے گا۔ انہوں نے بتایا کہ شادی مبارک، اقلیتوں کیلئے اقامتی اسکولس، بینکوں سے مربوط سبسیڈی اور قرض کی اسکیم کے علاوہ اردو اکیڈیمی کی اسکیمات پر مشتمل بروچر تیار کیا جارہا ہے جو اردو زبان میں بھی رہے گا۔ اس میں اسکیمات اور اس کے فوائد کی تفصیلات کے علاوہ درخواستوں کے ادخال کا طریقہ کار بھی درج رہے گا۔ شفیع اللہ نے بتایا کہ اکثر دیکھا گیا ہے کہ اقلیتی افراد اسکیمات کے لئے درکار اسنادات اور درخواستوں کے ادخال کے طریقہ کار سے واقف نہیں ہوتے اور وہ بہ آسانی بروکرس کے ہاتھوں میں پھنس جاتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس انفارمیشن سنٹر کے قیام کی تیاریاں تیزی سے جاری ہیں اور جلد ہی افتتاح عمل میں آئے گا۔ کمپیوٹر سنٹرس اور لائبریریز کے ملازمین کی خدمات اس سنٹر میں حاصل کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں اس سنٹر میں کمپیوٹرس نصب کرتے ہوئے درخواستوں کے آن لائن ادخال کی سہولت بھی فراہم کی جائے گی تاکہ غریب اور مستحق عوام کو می سیوا اور دیگر غیر متعلقہ افراد سے بچایا جاسکے۔ افتتاحی تقریب میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی، سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل اور ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو اے کے خاں کو مدعو کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT