Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر مؤثرعمل کیلئے لائحہ عمل تیار کرنے کی ہدایت

اقلیتی بہبود کی اسکیمات پر مؤثرعمل کیلئے لائحہ عمل تیار کرنے کی ہدایت

فنڈس کے استعمال کو یقینی بنانے کی کوشش، انچارج سکریٹری اقلیتی بہبود جی ڈی ارونا کا جائزہ اجلاس سے خطاب
حیدرآباد۔/10اکٹوبر، ( سیاست نیوز) انچارج سکریٹری اقلیتی بہبود شریمتی جی ڈی ارونا نے اقلیتی بہبودکی اسکیمات پر موثر عمل آوری کیلئے عہدیداروں کو لائحہ عمل تیار کرنے کی ہدایت دی ہے۔ شریمتی جی ڈی ارونا جو حالیہ عرصہ میں ایک ماہ تک انچارج سکریٹری اقلیتی بہبود کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکی ہیں، دوبارہ انہیں اس عہدہ کی عارضی طور پر ذمہ داری دی گئی۔ وہ محکمہ قبائیلی بہبود کے سکریٹری کی حیثیت سے فرائض انجام دے رہی ہیں۔ اقلیتی بہبود کی اسکیمات اور ان پر عمل آوری میں جی ڈی ارونا نے خصوصی دلچسپی کا مظاہرہ کیا اور دوسری مرتبہ ذمہ داری سنبھالنے کے بعد انہوں نے تمام اقلیتی اداروں کے ذمہ داروں اور اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ اسکیمات پر عمل آوری کا جائزہ لیا۔ انہوں نے حکومت کی جانب سے الاٹ کئے گئے فنڈز کے مکمل استعمال کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔ جی ڈی ارونا نے خاتون عہدیدار ہونے کے باوجود عازمین حج کی روانگی کے موقع پر رات بھر حج ہاوز میں قیام کرتے ہوئے انتظامات کی راست نگرانی کی۔ انہوں نے اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کے مستحق امیدواروں کے انتخاب میں بھی اہم رول ادا کیا۔ اقلیتی بہبود کی اسکیمات اور اقلیتوںکیلئے خدمات انجام دینے کی ان کی دلچسپی کو دیکھتے ہوئے مختلف گوشوں سے چیف منسٹر سے نمائندگی کی گئی ہے کہ انہیں مستقل طور پر اقلیتی بہبود کے سکریٹری کے عہدہ پر مقرر کیا جائے۔ خود جی ڈی ارونا نے کہا کہ اگر حکومت انہیں اقلیتی بہبود کی ذمہ داری دیتی ہے تو وہ بخوشی قبول کریں گی۔ ان کی عارضی ذمہ داری کے دوران اقلیتی بہبود کی کئی اسکیمات کا آغازہوا۔ حال ہی میں غریب مسلمانوں کیلئے آٹو رکشا فراہمی کی اسکیم کا ان کی نگرانی میں آغاز کیا گیا۔ شریمتی جی ڈی ارونا اگرچہ صرف انچارج سکریٹری ہیں لیکن وہ اسکیمات پر تیزی سے عمل آوری کے سلسلہ میں اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کو وقتاً فوقتاً ہدایات جاری کررہی ہیں اور اسکیمات کی رفتار کا جائزہ لے رہی ہیں۔ عام طور پر انچارج عہدیدار صرف انتہائی ضروری اُمور کی انجام دہی کی حد تک خود کو محدود رکھتے ہیں لیکن شریمتی جی ڈی ارونا نے اپنی دلچسپی سے یہ ثابت کردیا کہ انہیں اقلیتوں کی بھلائی کی فکر ہے۔ انہوں نے 14اکٹوبر سے حجاج کرام کی واپسی کے انتظامات کے بارے میں حج کمیٹی کے عہدیداروں سے معلومات حاصل کیں اور حج ٹرمنل میں حجاج کرام اور ٹرمنل کے باہر وزیٹرس کیلئے موثر انتظامات کی ہدایت دی۔ وہ 14 اکٹوبر کو حجاج کرام کے پہلے قافلے کی آمد کے موقع پر ایرپورٹ پر موجود رہیں گی۔ شریمتی جی ڈی ارونا نے اوورسیز اسکالر شپ کے منتخب امیدواروں کیلئے حکومت کی جانب سے بجٹ کی اجرائی کیلئے بھی نمائندگی کی ہے۔ وہ چاہتی ہیں کہ حکومت نے 25کروڑ روپئے مختص کئے ہیں ان کا مکمل استعمال کیا جائے۔ اب جبکہ اسکیم کیلئے امیدواروں کا انتخاب ہوچکا ہے انہوں نے ہدایت دی کہ ایسے طلباء جو بیرون ملک روانہ ہوچکے ہیں ان کی نشاندہی کرتے ہوئے اسکالر شپ کی پہلی قسط جاری کردی جائے۔ انہوں نے غریبوں کیلئے آٹو رکشا فراہمی کی اسکیم کی پیشرفت کا بھی جائزہ لیا۔ بتایا جاتا ہے کہ شریمتی جی ڈی ارونا اقلیتی بہبود کی کارکردگی کو بہتر بنانے کیلئے حکومت کو تجاویز پیش کرنے کا منصوبہ رکھتی ہیں جس میں محکمہ میں درکار اسٹاف کے تقررات کی تجویز شامل رہے گی۔

TOPPOPULARRECENT