Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی بہبود کے بجٹ کی پہلی قسط کی اجرائی غیر اطمینان بخش

اقلیتی بہبود کے بجٹ کی پہلی قسط کی اجرائی غیر اطمینان بخش

537 کروڑ 93 لاکھ 68 ہزار روپیوں کی اجرائی باقی ، تمام اقلیتی اداروں کے لیے بجٹ تقسیم
حیدرآباد۔/6 مئی، ( سیاست نیوز) حکومت نے مالیاتی سال 2016-17 کیلئے اقلیتی بہبود کو پہلی قسط کے طور پر منظورہ 717 کروڑ 24لاکھ 75ہزار روپئے میں سے 179کروڑ 71لاکھ 7ہزار روپئے جاری کئے ہیں۔ بجٹ کی اس اجرائی سے حکومت کی مختلف اسکیمات پر عمل آوری میں اقلیتی اداروں کو مدد ملے گی تاہم بجٹ کی اجرائی غیر اطمینان بخش بتائی جارہی ہے کیونکہ مزید 537کروڑ 93لاکھ 68ہزار کی اجرائی ابھی باقی ہے۔ حکومت نے پہلی قسط میں تمام اہم اقلیتی اداروں کو بجٹ جاری کردیا ہے۔ حکومت کے احکامات کے مطابق سنٹر فار ایجوکیشنل ڈیولپمنٹ آف میناریٹیز کو بجٹ میں مختص کئے گئے 3کروڑ کے منجملہ 75لاکھ روپئے جاری کئے گئے جبکہ مزید 2کروڑ 25لاکھ روپئے اجرائی باقی ہے۔ اس ادارہ کے ذریعہ مختلف پیشہ ورانہ کورسیس میں اقلیتی طلباء کو ٹریننگ دی جاتی ہے۔ دائرۃ المعارف کیلئے 75لاکھ روپئے جاری کئے گئے جبکہ بجٹ میں اس کیلئے 3کروڑ روپئے مختص کئے گئے۔ تلنگانہ کرسچین میناریٹی فینانس کارپوریشن کو ایک کروڑ 75لاکھ روپئے جاری کئے گئے جبکہ بجٹ میںاس کے لئے 7 کروڑ مختص کئے گئے۔ تلنگانہ حج کمیٹی کے 3کروڑ کے منجملہ 75 لاکھ کی اجرائی عمل میں آئی۔ تلنگانہ اقلیتی فینانس کارپوریشن و کرسچین فینانس کارپوریشن کو امداد کے طور پر علی الترتیب 2کروڑ 8لاکھ 13ہزار اور 23لاکھ 12ہزار روپئے جاری کئے گئے۔ تلنگانہ وقف بورڈ کے تحت ائمہ اور مؤذنین کے ماہانہ اعزازیہ کی اسکیم کیلئے 16لاکھ 25ہزار روپئے کی اجرائی عمل میں آئی۔ اردو اکیڈیمی کی اسکیمات اور اردو گھر شادی خانوں کی تعمیر کیلئے 23کروڑ کے منجملہ 5کروڑ 75لاکھ جاری کئے گئے۔ دعوت افطار اور کرسچین فیسٹول کیلئے الگ الگ 3 کروڑ 75 لاکھ روپئے جاری کئے گئے جبکہ بجٹ میں 30 کروڑ کی گنجائش رکھی گئی ہے۔ میناریٹیز اسٹڈی سرکل کے ذریعہ اقلیتی طلباء کو مختلف کورسیس میں کوچنگ کیلئے 7 کروڑ کا بجٹ مختص کیا گیا جس میں سے ایک کروڑ 75لاکھ کی اجرائی عمل میں آئی۔ مکہ مسجد اور شاہی مسجد کی مرمت کیلئے 2کروڑ 50لاکھ کے منجملہ 62 لاکھ 50 ہزار روپئے جاری کئے گئے۔ سبسیڈی سے مربوط اقلیتی فینانس کارپوریشن کی قرض اسکیم کیلئے بجٹ میں 150کروڑ مختص کئے گئے جس میں سے 37کروڑ 50لاکھ روپئے کی اجرائی عمل میں آئی۔ سروے کمشنر وقف کیلئے 50 لاکھ اور تلنگانہ اسٹیٹ میناریٹیز ریسیڈنشیل اسکولس و ہاسٹلس کیلئے 87 کروڑ 50لاکھ اور ٹریننگ ایمپلائمنٹ اسکیم برائے اقلیت کیلئے 3کروڑ جاری کئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT