Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / اقلیتی طلباء کو سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ کی تیاریاں

اقلیتی طلباء کو سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ کی تیاریاں

اوور سیز اسکالر شپ اسکیم کے لیے نئی تاریخ کا عنقریب اعلان
حیدرآباد۔/27اکٹوبر، ( سیاست نیوز) محکمہ اقلیتی بہبودکی جانب سے جاریہ سال اقلیتی طلبہ کو سیول سرویس امتحانات کی کوچنگ کی تیاریاں شروع کردی گئی ہیں۔ گذشتہ سال کوچنگ سنٹرس کے انتخاب کے بارے میں قائم کردہ کمیٹی کی جانب سے رپورٹ کی عدم پیشکشی کے باعث ایک سال سیول سرویس کوچنگ کا اہتمام نہیں کیا جاسکا۔ تین اعلیٰ عہدیداروں پر مشتمل کمیٹی نے حال ہی میں حکومت کو اپنی رپورٹ پیش کی جس میں اقلیتی طلبہ کو کوچنگ کیلئے 5 نامور کوچنگ سنٹرس کے ناموں کی سفارش کی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ رپورٹ کی وصولی کے بعد اقلیتی بہبود نے اقلیتی اسٹڈی سرکل کے ذریعہ کوچنگ کی تیاریوں کا آغاز کیاہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے بتایا کہ سیول سرویسس کیلئے بہت جلد اعلامیہ جاری کردیا جائے گا۔ اس کے علاوہ جاریہ سال اوورسیز اسکالر شپ اسکیم کیلئے درخواستوں کے ادخال کی تاریخ کا بھی اعلان کردیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ بعض معاملات میں حکومت کی منظوری کا انتظار ہے تاہم اقلیتی طلباء کو  اسکیم سے محرومی سے بچانے کیلئے درخواستوںکی طلبی کا فیصلہ کیا گیا، بعد میں درکار منظوری حکومت سے حاصل کرلی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ جاریہ سال سے اس اسکیم  کے تحت 20 لاکھ روپئے تعلیمی امداد کے طور پر دو قسطوں میں جاری کئے جائیں گے۔ حکومت نے تعلیمی امداد کی رقم میں اضافہ کے پیش نظر بعض نئی شرائط کو شامل کیا ہے۔ اوورسیز تعلیم کیلئے مزید 8 ممالک کا اضافہ کیا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ طلباء کیلئے اہلیتی امتحانات میں نشانات کی حد مقرر کی جائے گی۔ سکریٹری اقلیتی بہبود کے مطابق دونوں اسکیمات پر جاریہ سال عمل آوری یقینی طور پر کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ سیول سرویسس میں اقلیتوں کی کم نمائندگی کو دیکھتے ہوئے نامور کوچنگ سنٹرس میں کوچنگ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کے اخراجات حکومت ادا کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اسکریننگ ٹسٹ کے ذریعہ طلباء کا انتخاب کیا جائے گا اور منتخب طلباء اپنی پسند کے ادارہ میں داخلہ لے سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ طلباء کو اس حد تک اختیار دیا جائے گا کہ وہ ایک سے زائد اداروں میں علحدہ مضامین کی کوچنگ حاصل کرسکیں۔ حکومت نے اس اسکیم کیلئے 2 کروڑ روپئے مختص کئے تھے۔ گزشتہ سال اسکریننگ ٹسٹ کے ذریعہ 62 طلباء کا انتخاب کیا گیا تھا لیکن کوچنگ کا آغاز نہیں ہوسکا۔ اس بات کی کوشش کی جارہی ہے کہ گذشتہ سال کے منتخب طلباء کے ذریعہ پہلے بیاچ کا آغاز کردیا جائے اور اسکریننگ ٹسٹ میں منتخب طلباء سے دوسرا بیاچ شروع ہو۔ اس طرح دو بیاچس سیول سرویسس کی کوچنگ حاصل کرسکتے ہیں جس سے اقلیتی طلباء کی نمائندگی میں اضافہ ہوسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT